ایپکا نے حکومتی نمائندوں سے مذاکرات کے بعد احتجاج ختم کر دیا

ایپکا نے حکومتی نمائندوں سے مذاکرات کے بعد احتجاج ختم کر دیا

  

لاہور(خبرنگار) آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین محمد افضل اور مرکزی صدر منیر احمد بلوچ کی اپیل پرگزشتہ روز چوتھے روز بھی ملک بھر کے کلرکوں اور ملازمین نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے بجٹ کے خلاف تمام دفاتر میں مکمل ہڑتال کی ، ضلعی؍صوبائی ہیڈ کواٹرزپر احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ لاہور میں ایپکا کے صوبائی صدر محمد سلطان مجددی کی قیادت میں مظاہرہ ہوا جس میں مختلف محکمہ جات کے کلرکس و ملازمین نے شرکت کی، حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کرتے ہوئے ہائی کورٹ چوک بلاک کر دیا جس پر پولیس نے کلرکوں سے چوک خالی کروانے کے لئے دھکے دئے جس پر ڈی ایس پی انار کلی کی محمد سلطان مجددی سے تلخ کلامی ہوئی ۔ جس پر کلرکوں نے مشتعل ہوکر ایک گھنٹہ تک جی پی او چوک مال روڈ بند رکھا۔ جس سے ٹریفک جام ہوگئی اور مال روڈ پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی۔اسی دوران رانا ثنااللہ صوبائی وزیر قانون نے محمد سلطان مجددی اور صدر لاہور چوہدری عبدالشکور کے ساتھ پنجاب اسمبلی میں مذاکرات کئے جس میں انہوں نے کہا کہ کلرکوں کی اپ گریڈیشن و دیگر مطالبات کی منظوری کا اعلان وزیر اعلیٰ پنجاب جولائی کے پہلے ہفتہ میں کنونشن میں کریں گے۔ بعد میں سول سیکرٹریٹ میں سید مبشر رضا ایڈیشنل چیف سیکرٹری پنجاب ، سقراط امان ایڈیشنل سیکرٹری اور دیگر افسران نے ایپکا کے وفد کے ساتھ تفصیلی مذاکرات کئے جس کی قیادت محمد سلطان مجددی نے کی وفد میں چوہدری عبدالشکور، ملک ممتاز کھوکھر، قاضی طیب فاروقی ، عزیزاللہ، محمد ادریس کمبوہ اور عمران خان نے شرکت کی۔ جس پر حکومت کی جانب سے بھی مطالبات کی منظوری کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ایپکا کا احتجاج ریکارڈ ہو گیا ہے اپ اس کو ختم کریں جس پر ان کی تیسری بار یقین دہانی پر اور ماہ رمضان کے تقدس کے پیش نظر ایپکا کی سینٹرل کمیٹی نے مشاورت کے بعد اپنا احتجاج عارضی طور پر ملتوی کر دیا ہے۔ مرکزی صدر منیر احمد بلوچ نے کہا کہ اگر حکومت نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے بجٹ پر نظر ثانی ، سکیل ریوائز ، اپ گریڈیشن نہ کی اور میڈیکل، کنیونس الاؤنس میں مہنگائی کی تناسب سے اضافہ نہ کیا تو عید کے بعد حکومت کے خلاف دوبارہ تحریک چلائی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب اور سندھ فوری طور پر ایپکا کے مطالبات تسلیم کریں۔محمد سلطان مجددی نے بات کرتے ہوئے کہا کہ اگرجولائی میں وزیر اعلیٰ پنجاب نے مطالبات کی منظوری کا اعلان نہ کیا تو عیدکے دن کلرکس و ملازمین اپنے بچوں کے ساتھ عید کرنے کی بجائے پنجاب اسمبلی کے سامنے مظاہر ہ اور دھرنا دیں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -