تمام اضلاع میں معذور افراد کیلےء بحالی مراکز قائم کئے جائیں گے،سلمان رفیق

تمام اضلاع میں معذور افراد کیلےء بحالی مراکز قائم کئے جائیں گے،سلمان رفیق

  

لاہور( جنرل رپورٹر) پنجاب کے ہر ضلع میں معذور افراد کے لئے بحالی مرکز قائم کئے جائیں گے پائلٹ پراجیکٹ کے طور پرپہلے مرحلہ میں ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز پر بحالی مراکز قائم کئے جائیں گے ۔ انٹر نیشنل کمیٹی برائے ہلال احمر (ICRC) بحالی مراکز کے قیام میں عملی تعاون کرے گی اس بات کا اعلان مشیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق کے ساتھ (ICRC) کے جسمانی بحالی پروگرام منیجر مسٹر کارلوس ڈی لیگڈو کی ملاقات کے موقع پر کیا گیا ۔اس موقع پر سیکرٹری صحت پنجاب جواد رفیق ملک ،ایڈیشنل سیکرٹری صحت ٹیکنیکل ڈاکٹر سلمان شاہد ، آئی سی آر سی کے بخت سرور اور مرکز بحالی معذوراں میو ہسپتال کے انچارج ڈاکٹر خالد جمیل اور کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے پروفیسر قاضی محمد سعید بھی موجود تھے ۔ اس موقع پر آئی سی آر سی کی جانب سے مشیر صحت اور سیکرٹری صحت کو بریفنگ دی گئی ۔ انٹر نیشنل کمیٹی برائے ہلال احمر مظفر گڑھ میں ایک بحالی مرکز پہلے ہی چلا رہی ہے جہاں4314 معذور افراد کے پروسیجر کئے گئے اور جسمانی اعضا سے محروم افراد کو مصنوعی اعضاء بھی لگائے جا رہے ہیں ۔بخت سرور نے کہا کہ قدرتی طو رپر جسمانی اعضا ء سے محروم افراد کے علاوہ پاکستان میں زلزلے اور دہشت گردی کے واقعات کی وجہ سے معذور ہونے والے افراد کی خاصی تعداد موجود ہے اور پنجاب میں ایک محتاط اندازے کے مطابق 5 لاکھ معذور افراد کو مصنوعی اعضاء کی ضرورت ہے تاکہ وہ نارمل زندگی گزارنے کے قابل ہو سکیں ۔ سیکرٹری صحت جواد رفیق ملک نے کہا کہ معذور افراد کا مکمل ڈیٹا جمع کرنے کی ضرورت ہے تاکہ درست انداز میں منصوبہ بندی کی جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ بحالی مراکز کے لئے انفراسٹرکچراور مالی وسائل کے ساتھ تربیت یافتہ افرادی قوت(Trained Human Resource) کی فراہمی زیادہ اہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلی محمد شہباز شریف معذور افراد کی بحالی کے لئے ادارے بنانے کا عندیہ پہلے ہی دے چکے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -