آصف علی زرداری سیاسی تنہائی کاشکار،سیاسی قائدین کاافطار پارٹی میں شرکت سے انکار،ڈنراتحادیوں تک محدود

آصف علی زرداری سیاسی تنہائی کاشکار،سیاسی قائدین کاافطار پارٹی میں شرکت سے ...
آصف علی زرداری سیاسی تنہائی کاشکار،سیاسی قائدین کاافطار پارٹی میں شرکت سے انکار،ڈنراتحادیوں تک محدود

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مسلح افواج کے ذمہ داران کیخلاف بیان بازی پر سابق صدرآصف علی زرداری سیاسی تنہائی کا شکار ہوگئے ہیں اور افطار پارٹی کے بہانے سیاسی قائدین سے ملاقات کی چال بھی ناکام دکھائی دیتی ہے اور اب صرف اس ڈنر کو اتحادیوں تک محدود کردیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدر نے اپنے دورحکومت میں اتحادی رہنے والی مسلم لیگ ق کی قیادت کو افطار پارٹی میں شرکت کی دعوت دی جس پر ق لیگ نے کوئی واضح جواب نہیں دیا بلکہ اس ضمن میں مشاورت شروع کردی جس کے بعد کوئی حتمی فیصلہ کیاجائے گاتاہم ذرائع کاکہناہے کہ چوہدری شجاعت طبیعت کی ناسازی کی وجہ سے افطار پارٹی میں شرکت نہیں کریں گے ، یہ واضح نہیں ہوسکاکہ طبیعت واقعی ناسازہے یا سیاسی حکمت عملی ۔ دوسری طرف پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بھی زرداری کی افطار پارٹی میں شرکت سے انکار کردیا ہے ، دیگر جماعتیں بھی تذبذب کا شکار ہیں جس کے بعد افطار پارٹی کو اتحادیوں تک محدود کردیاگیا۔

مقامی میڈیا کے مطابق آصف زرداری نے وزیراعظم نوازشریف کو ٹیلی فون کرکے افطارپارٹی میں شرکت کی دعوت دی جس کیلئے وزیراعظم نے نیم رضامندی ظاہر کردی اور کوئی یقین دہانی نہیں کرائی ، مسلم لیگ ن کا وفد افطارپارٹی میں شرکت کرسکتاہے تاہم وزیراعظم ہاﺅس کے ترجمان نے کسی بھی ٹیلی فونک رابطے کی ہی تردید کردی جبکہ پیپلزپارٹی کے فرحت اللہ بابر نے بھی رابطے کی تردید کی۔

دوسری جانب پیپلزپارٹی کی جانب سے عوامی نیشنل پارٹی اور جمعت علما اسلام (ف) کو بھی دعوت دی گئی لیکن اے این پی کے سربراہ اسفند یار ولی نے بیماری جبکہ جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ذاتی مصروفیات کو بنیاد بناتے ہوئے شرکت سے معذرت کرلی۔

آخری اطلاعات تک سابق صدرآصف علی زرداری تنہائی کا شکار ہیں اور سیاسی قیادت کو اکٹھا کرنے کیلئے افطار پارٹی دینے کی کوشش بھی ناکام دکھائی دیتی ہے ۔

مزید :

قومی -