عمران فارق قتل کیس،2011میں افغانستان میں روپوش ہوئے،سیاسی جماعت نے قتل کروانے کا پلان تیار کیاتھا:ملزمان

عمران فارق قتل کیس،2011میں افغانستان میں روپوش ہوئے،سیاسی جماعت نے قتل کروانے ...
عمران فارق قتل کیس،2011میں افغانستان میں روپوش ہوئے،سیاسی جماعت نے قتل کروانے کا پلان تیار کیاتھا:ملزمان

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک)عمران فاروق قتل میں ملوث پاک افغان بارڈر سے گرفتار ہونے والے دو ونوں ملزمان کاکہناہے کہ وہ لندن سے 2011میں افغانستان جا کر روپوش ہو گئے تھے کیونکہ انہیں ان کی سیاسی جماعت کی جانب سے مارنے کا پلان تیار کیا تھا ۔

نجی ٹی وی چینل جیو کے مطابق ملزمان نے دوران تفتیش اعتراف کیاہے کہ وہ اپنی جان بچانے کیلئے افغانستان میں روپوش ہو گئے تھے اور گزشتہ روز اپنے اہل خانہ کیلئے پاکستان میں واپس آر ہے تھے تاہم ایف سی اہلکارو ںنے کمال ٹو چیک پوسٹ کے قریب حراست میں لے لیا ۔

انہوں نے اعتراف کیاہے کہ ان کا تعلق کراچی کی ایک سیاسی جماعت سے ہے اور انہیں کوئی بھی علاقائی زبان نہیں آتی ،کراچی میں جان کو خطرہ لاحق ہونے کے باعث ہو کراچی سے فرار ہو ئے تھے ۔

مزید :

کراچی -اہم خبریں -