آئیے آپ کو ملواتے ہیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کی ناک تلے پاکستان کے جھنڈے بنانے والے بہادر نوجوان سے!

آئیے آپ کو ملواتے ہیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کی ناک تلے پاکستان کے ...
آئیے آپ کو ملواتے ہیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کی ناک تلے پاکستان کے جھنڈے بنانے والے بہادر نوجوان سے!

  

سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ وادی کے باسی ہزاروں جانوں کے نذرانے دے چکے ہیں لیکن انہوں نے بھارتی تسلط کو قبول کرنے سے انکار کر دیا ہے۔غاصب بھارت کا کوئی بھی ہتھکنڈا ان کے جذبہ حریت پسندی کو سرد نہیں کر سکا۔ اب تو سری نگر میں آزادی کے لیے نکلنے والے ریلیوں میں پاکستان کا پرچم سرعام لہرایا جا رہا ہے لیکن غاصب اب بھی اپنی روایتی ہٹ دھرمی پر قائم ہے، اسے سامنے دیوار پر لکھا بھی نظر نہیں آ رہا۔ یہ پاکستانی پرچم لہرانے والوں کی شکلیں تو کسی حد تک ٹی وی چینلز کے ذریعے ہم تک پہنچ جاتی ہیں لیکن ان پرچموں کا تخلیق کار کون ہے؟کیونکہ بھارت میں تو پاکستانی پرچم دستیاب نہیں لہٰذا مقبوضہ وادی میں کہاں سے آ جاتا ہے؟آئیے آپ کو بتائیں۔ یہ سری نگر کا 20سالہ نوجوان شاہد ہے جو پاکستانی پرچم تخلیق کرتا ہے اور مظاہروں میں خود بھی لہراتا ہے اور اپنے ساتھیوں کو بھی دیتا ہے۔

شاہد کا کہنا ہے کہ وہ پورا پرچم گھر میں تیار کرتا ہے، اس کے لیے سبز اور سفید کپڑا مقامی مارکیٹ سے خریدتا ہے، کپڑے کی سلائی کرکے اس پر سفید رنگ کے فیبرک پینٹ سے چاند اور تارہ بناتا ہے ۔شاہد نے کہا کہ پاکستانی پرچم بنا کر میں کسی کو ڈرانا نہیں چاہتا۔ یہ میرے نزدیک احتجاج کرنے کی ایک شکل ہے۔احتجاجی ریلیوں میں اکثر یہ پرچم لہرانے میں میرے دوست بھی پیش پیش ہوتے ہیں جن میں 19سالہ منیب اور 18سالہ الطاف شامل ہیں، میرے یہ دو دوست یہ بھی جانتے ہیں کہ میں کہاں بیٹھ کر پاکستانی پرچم بناتا ہوں اور کیسے بناتا ہوں۔ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -