کئی علاقوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ تکنیکی وجوہات کے باعث ہوئی: وزارت پانی و بجلی

کئی علاقوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ تکنیکی وجوہات کے باعث ہوئی: وزارت پانی و بجلی
کئی علاقوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ تکنیکی وجوہات کے باعث ہوئی: وزارت پانی و بجلی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) رمضان المبارک کے پہلے روز ہی سورج نے روزہ داروں کابرا حال کر دیا اور رہی سہی کسر بجلی کی لوڈشیڈنگ نے پوری کر دی جبکہ کئی علاقوں میں بجلی کی طویل بندش کے باعث روزہ دار بلبلاتے رہے تاہم وزارت پانی و بجلی نے اس لوڈشیڈنگ کو ”تکنیکی“ قرار دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزارت پانی و بجلی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ افطار کے اوقات میں 75 فیصد دیہی علاقوں میں لوڈشیڈنگ نہیں کی گئی جبکہ چند علاقوں میں تکنیکی وجوہات کی بناءپر لوڈشیڈنگ کرنا پڑی۔ عوام نے حکومت کی اس دلیل کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکمرانوں نے رمضان المبارک کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کرنے کے دعوے تو کر دیئے لیکن ہمیشہ کی طرح انہیں وفا کرنے میں ناکام رہے ہیں ۔

عوام نے وزیراعظم نواز شریف سے اس صورتحال کا فوری نوٹس لینے اور معاملات کو بہتر کرنے کی اپیل کی ہے اور کہا ہے کہ اگر لوڈشیڈنگ میں کمی نہیں کی جا سکتی تو کم از کم ان ”تکنیکی وجوہات“ کے بارے میں ہی عوام کو بتا دیا جائے تاکہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کی اصل وجہ معلوم ہو سکے۔ گرمی اور لوڈشیڈنگ کے ستائے لوگوں کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمران ماہ مقدس میں بھی عوام کو ریلیف نہیں دے سکے ۔ حکومت نے بجٹ کے نام پر مہنگائی کا بم پھوڑا اور ذخیرہ اندوزوں نے بھی ماہ رمضان کی آمد پر اپنا ”رنگ“ دکھانا شروع کر دیا ہے اور اب بجلی کی لوڈشیڈنگ میں بھی ہوشربا اضافہ ہو گیا ہے۔

واضح رہے کہ ملک بھر کے مختلف شہروں میں بجلی کی آنکھ مچولی جاری رہے جبکہ کئی علاقوں میں تو 10گھنٹوں تک طویل لوڈشیڈنگ بھی ہوئی تاہم متعلقہ افسران کے مطابق طویل لوڈشیڈنگ ٹرانسفارمرز خراب ہونے کے باعث ہوئی کیونکہ سسٹم زیادہ بوجھ برداشت کرنے کے قابل نہیں ہے اور اسی باعث مختلف علاقوں میں ٹرانسفارمرز خراب ہونے کے باعث بجلی کا سلسلہ منقطع ہوا۔

ذرائع کے مطابق دن بھر بجلی کے ہاتھوں ”تشدد“ سہنے کے بعد شہریوں کو رات کو بھی چین میسر نہیں آیا اور کئی گھنٹوں سے بجلی کی بندش کے باعث شہری سڑکوں پر نکل آئے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ کراچی، لاہور، پشاور، راولپنڈی، سکھر، سرگودھا اور ملتان سمیت کئی شہروں میں اب بھی بجلی بند ہے اور شہری سراپا احتجاج ہیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -