سعودی وژن 2030ء کا خیر مقدم ،سعودی عرب سمیت خطے کو درپیش چیلنجوں کا مقابلہ کریں گے :امریکہ

سعودی وژن 2030ء کا خیر مقدم ،سعودی عرب سمیت خطے کو درپیش چیلنجوں کا مقابلہ ...

جدہ (محمد اکرم اسد/بیورو چیف) امریکی صدر کی طرف سے سعودی وژن 2030ء میں تعاون کا اعلان کیا ہے ،سعودی عرب نے 9/11 حملوں کی رپورٹ شائع اور سعودی عرب سے اس کا تعلق نہ جوڑنے کا مطالبہ کیا۔ تفصیلات کے مطابق امریکی صدر باراک اوباما سے وائٹ ہاؤس میں نائب ولی عہد و وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان نے ملاقات کی۔ انہوں نے خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی جانب سے انہیں خیر سگالی کا پیغام دیا۔ امریکی صدر نے شاہ سلمان کے نام خیر سگالی کا پیغام دیا۔ دونوں نے سعودی عرب اور امریکہ کے منفرد تعلقات پر تبادلہ خیال کیا۔ امریکی صدر نے واضح کیا کہ ان کا ملک سعودی عرب کے ساتھ خطے کو درپیش چیلنجوں کا مقابلہ کرے گا ۔ ملاقات میں سعودی عرب کا ترقیاتی اور اقتصادی وژن بھی زیر بحث آیا۔ امریکی صدر نے سعودی وژن 2030ء کا خیر مقدم کیا۔ ملاقات کے بعد سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے بتایا امریکی صدر کو سعودی وژن 2030ء کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے امریکہ سے 11 ستمبر کے طیارہ حملوں کی رپورٹ شائع کرنے اور یہ واضح کرنے کا مطالبہ کیا کہ سعودی عرب کا ان سے کوئی تعلق نہیں۔ انہوں نے توجہ دلائی سعودی عرب القاعدہ اور داعش کا ہدف ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب دہشت گردی کے خاتمے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب 24لاکھ شامی اور 10لاکھ یمنی پناہ گزینوں کی میزبانی کررہا ہے۔ یہ لوگ خیموں میں نہیں بلکہ باقاعدہ رہائش پذیر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کے ساتھ ہمارے سٹرٹیجک تعلقات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے دہشت گردی کے لئے مالی اعانت کو بند کرنے کے لئے اقدامات کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شامی بحران بشارالاسد کی رخصت پر ہی ختم ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ایران کے متعلق جو موقف پہلے تھا آج بھی ہے۔

مزید : علاقائی