معاشی مدد کے عوض بیٹی تحفے میں دینے پر والدین سمیت 3افراد کو گرفتار کر لیا گیا

معاشی مدد کے عوض بیٹی تحفے میں دینے پر والدین سمیت 3افراد کو گرفتار کر لیا گیا
معاشی مدد کے عوض بیٹی تحفے میں دینے پر والدین سمیت 3افراد کو گرفتار کر لیا گیا

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں والدین نے معاشی مدد کرنے پر اپنی جواں سالہ بیٹی ایک معمر شخص کو تخفے میں دیدی ۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکہ میں لڑکی کے والدین نے معاشی مدد کے بدلے اپنی 14 سالہ لڑکی کو بڑیعمر کے ایک شخص کو بطور تحفہ دیدیا جس کے بعد قانون حرکت میں آیا اور واقعے میں ملوث تینوں افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کی خبر ملنے کے بعدلڑکی کے والد 43 سالہ ڈینیئل اور اس کی 42 سالہ والدہ سیویلا کوگرفتار کیاگیا ہے جبکہ تیسرے ملزم 51 سالہ لِی کیوپلان کو بھی حراست میں لیا ہے۔

پولیس کا مزید کہنا ہے کہ پنسلوینیا میں واقع اس شخص کے گھر سے مزید 11 لڑکیاں برآمد کی گئیں جن کی عمریں 6ماہ سے 18سال کے درمیان ہیں اوریہ سب ایمش ہیں(ایمش دراصل ایسے عیسائیوں کو کو کہتے ہیں جو بہت سادگی سے رہتے ہیں اور روایتی ہونے کے ساتھ ساتھ جدید ٹیکنالوجی ٹیلی وژن، کار اور کمپیوٹرز کا استعمال بہت کم کرتے ہیں) تاہم عدالتی ریکارڈ سے واضح نہیں کہ یہ لڑکیاں کہاں سے آئی ہیں۔

پولیس کے مطابق ان جرائم کی بنیاد پر لی کیوپلان پر 10 مختلف جرائم کی فرد جرم عائد کی گئی ہے جبکہ لڑکی کے والدین پر جنسی جرم سے متعلق سازش کی فردِ جرم عائد کی گئی ہے، دونوں پر اپنے ہی بچوں کے مستقبل کو خطرے میں ڈالنے کی بھی فردِ جرم عائد کی گئی۔عداتی دستاویز کے مطابق یہ جوڑا مالی مدد کیے جانے کے باعث کافی شکر گزار تھا۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

لڑکی کے والدین نے جرم تسلیم کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ انٹر نیٹ پر موجود مواد سے انہیں لگا کہ کسی کے احسان کے عوض ایسا کرنا قانونی ہوگا۔

عدالتی ریکارڈ کے مطابق یہ لڑکی اب 18 برس کی ہے جبکہ کیوپلان کے پاس جانے کے بعد وہ حاملہ ہو گئی۔ اس مقدمہ کی سماعت دو اگست سے شروع ہو گی۔

مزید : بین الاقوامی