انتخابات ، کاغذات کی جانچ پڑتال کا عمل جاری ، جاوید ہاشمی عامر ڈوگر کیخلاف اعتراضات دا ئرہ

انتخابات ، کاغذات کی جانچ پڑتال کا عمل جاری ، جاوید ہاشمی عامر ڈوگر کیخلاف ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان‘ خانیوال ‘ کبیروالا ‘ بٹہ کوٹ ‘ جلالپور پیروالا ‘ جام پور ‘ تونسہ شریف ‘ فتح پور ‘ مٹھن کوٹ ‘ جتوئی( خبر نگار نگار خصوصی ‘ نمائندگان) ملک بھر کی طرح جنوبی پنجاب میں بھی کاغذات نامزدگی کی سکرونٹی کا عمل جاری ہے اور شیڈول کے مطابق آج اختتام پذیر ہوگا ۔ گزشتہ روز مخدوم جاوید ہاشمی اور ملک عامر ڈوگر کیخلاف اعتراضات دائر کیے گئے جبکہ شیخ طارق رشید کیخلاف تعلیمی قابلیت کا اعتراض مسترد کردیا گیا ‘ عبدالغفار ڈوگراور معین الدین قریشی کیخلاف سماعت آج تک۔(بقیہ نمبر1صفحہ12پر )

ملتوی کر دی گئی ۔ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 193 کے تمام امیدواروں‘ کے کاغذات درست قرار پائے ‘ ڈیرہ میں مختلف امیدواروں پر لگے اعتراضات پر فیصلہ آج ہوگا ‘ غلام فرید کوریجہ کے این اے 195 اور پی پی 296 سے کاغذات منظور کر لیے گئے۔ ملتان سے خبرنگار خصوصی کے مطابق ملتان (خبر نگار خصوصی)ملک بھرکی طرح ملتان میں بھی امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کاعمل پھرشروع ہوگیاہے جبکہ جانچ پڑتال کاآج آخری روزہے۔اس سلسلے میں گزشتہ روز ریٹرننگ آفیسروں نے الیکشن کمیشن کی ہدایات کے تحت دوبارہ کام کاآغازکردیاہے اور امیدواروں کی بڑی تعدادکاغذات کی جانچ پڑتال کے لئے ریٹرننگ آفیسروں کے پاس پیش ہوئی اورکاغذات کی جانچ پڑتال کرائی گئی ہے۔ کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے دوران جاویدہاشمی اورملک عامرڈوگرکے خلاف نئے اعتراضات دائرکر دئیے گئے جبکہ شیخ طارق رشیدکے خلاف غلط تعلیمی قابلیت لکھنے کااعتراض مسترکردیاگیاہے۔تفصیل کے مطابق ریٹرننگ آفیسر حلقہ این اے155 کوتحریک انصاف کے امیدواراظہرسلیم کملانہ نے درخواست دائر کی تھی کہ مذکورہ حلقہ سے سابق ایم این اے شیخ طارق رشید نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جنہوں نے سال2008 ء کے انتخابات میں اپنے کاغذات نامزدگی میں تعلیمی قابلیت بی اے ظاہرکی اور اب کاغذات میں میٹرک فیل کارزلٹ کارڈجمع کرایاہے جو بدیانتی ہے اس لئے انہیں نااہل قراردینے کاحکم دیاجائے اس موقع پرشیخ طارق رشیدکے وکلاء نے دلائل دئیے کہ درخواست گذارکی جانب سے صرف کاغذات کی فوٹوکاپی پیش کی گئی ہے اورکوئی بھی ثبوت تصدیق شدہ نہیں ہے اس لئے اعتراضات مستردکئے جائیں جس پربحث کے بعد اعتراض مستردکرنے کاحکم دیاگیاہے۔ دریں اثناء ملتان کے شہبازعلی خان گرمانی نے درخواست دائرکی ہے کہ حلقہ این اے 155 سے سید مخدوم محمدجاویدہاشمی امیدوارہیں جو سیاست کوعبادت کی بجائے صرف ذاتی مفادات کے لئے استعمال کرتے ہیں اورزمانہ جوانی سے اب تک کئی سیاسی جماعتیں تبدیل کرچکے ہیں اوراس بابت کئی بے نامی جائیدادیں بناچکے ہیں اوراپنے کاغذات نامزدگی میں اپناذریعہ آمدن کاحصول نہیں بتایاہے نیز ان کی اصغرخان کیس میں سپریم کورٹ میں طلبی ہوچکی ہے اس کے ساتھ انہوں نے اعلیٰ عدلیہ اورپاک آرمی کے خلاف انتہائی نازیباالفاظ استمعال کرتاہے اس لئے انہیں نااہل قراردیا جائے مذکورہ درخواست پرآج سماعت ہوگی۔دریں اثناء امیدوارملک عامرڈوگرکے خلاف اظہررمضان نے اعتراض عائدکیاتھاکہ انہوں نے کاغذات نامزدگی میں اپنے اثاثوں کے کم زیادہ ہونیکی تفصیلات نہیں بتائی ہیں اورمیپکوکے بھی ڈیفالٹرہیں تاہم گزشتہ روز سماعت پر مذکورہ اعتراض واپس لے لیاگیاتاہم ملتان کے ووٹراسداللہ خان نے انہی اعتراضات پر نئی درخواست دائرکردی ہے جس پرآج سماعت ہوگی۔
ریٹرننگ آفیسروں کی جانب سے ملک عبدالغفارڈوگراورمعین الدین ریاض قریشی کے خلاف اعتراضات پرسماعت آج تک ملتوی کردی گئی جبکہ شہزادمقبول بھٹہ کے خلاف سماعت آج ہوگی۔تفصیل کے مطابقریٹرننگ آفیسر حلقہ 157 کو علی موسیٰ گیلانی ، زین قریشی کی جانب سے اعتراض عائدکیاگیا تھا کہ سابق ایم این اے عبدالغفار ڈوگر نے عمرہ کی ادائیگی کی رقم 15 ہزار جبکہ حج کی ادائیگی کے لیے 25 ہزار کی رقم لکھی ہے جوکہ بد دیانتی ہے اس لیے انہیں الیکشن میں حصہ لینے سے روکنے کا حکم دیا جائے جبکہ عبدالغفار ڈوگر کے کونسل نے موقف اختیار کیا کہ انہیں نے عمرہ اور حج کی ادائیگی کی کم رقم لکھنے کے ساتھ رقم کی تفصیل واضح کی ہے کہ انہیں اسلام آباد آنے جانے کا خرچ گورنمنٹ کی جانب سے دیا جاتا ہے انہیں نے وہی رقم عمرہ اور حج کی ادائیگی میں استعمال کیا ہے فاضل جج نے تفصیلات طلب کرتے ہوئے سماعت آج19 جون تک ملتوی کردی ہے۔دریں اثناء سابق صوبائی وزیرمعین الدین ریاض قریشی کی جانب سے جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی کے حلف نامہ میں خود کوکسی بھی ادارہ کانادہندہ ہونے نہیں ہونے کابیان دیاگیاتھا تاہم فاضل عدالت میں سٹیٹ بنک آف پاکستان کی رپورٹ پیش کی گئی کہ ان کی اہلیہ صائمہ معین قریشی نے2 بنکوں کی کروڑوں روپے کی نادہندہ ہیں اور اثاثے بھی درست طورپرظاہرنہیں کئے گئے ہیں۔ جس پرریٹرننگ آفیسر حلقہ پی پی 213 نے آج بحث کے لئے سماعت ملتوی کرنیکاحکم دیاہے۔اس طرح حلقہ این اے154سے سابق ایم پی اے شہزادمقبول بھٹہ نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جنہوں نے سابقہ انتخابات 2008 ء میں اپنی تعلیمی قابلیت بی اے ظاہرکی اور2014 ء کے انتخابات میں تعلیمی قابلیت کے خانہ میں نہیں کالفظ لکھااوراب کاغذات میں خودکوایف اے ظاہرکر دیا ہے اس طرح اراضی کی قیمت درست ظاہرنہیں کی ہے جس پرآج سماعت ہوگی۔ خانیوال سے بیورو نیوز کے مطابق گزشتہ روز مقامی شہری میاں مظفر سیال سکنہ92/10Rنے ریٹرننگ آفیسر قومی حلقہ 151خانیوال غلام عباس سیال کی عدالت میں پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار قومی اسمبلی حلقہ151سردار احمدیارہراج کے خلاف پٹیشن فائل کی انہوں نے کاغذات نامزدگی میں کینیڈا کی دہری شہریت کی منسوخی کی مصدقہ کاپی نہیں لگائی پھر سردار احمدیارہراج نے وزیراعظم کے معاون خصوصی کے طورپر سرخ پاسپورٹس پر جو کینیڈا کا سفر کیا اسے درج نہیں کیا پھر اکاؤنٹس اور دیگر امورکی تفصیلات نہیں دیں لہذا ان کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جائیں اور ان تمام امور کی سٹیٹ بنک ،ایف بی آر اور امیگریشن ڈیپارٹمنٹ سے انکوائری کروائی جائے پٹیشنر مظہر سیال کے وکیل رانا ندیم عبداللہ نے اپنے دلائل مکمل کرلیئے ۔دریں اثناء یٹرننگ آفیسر صوبائی حلقہ206زبیر خان غوری نے مسلم لیگ ن کے امیدوار نشاط احمد ڈاہا کے خلاف محکمہ سوئی گیس کی جانب سے بل کی مد میں 71لاکھ روپے کی نادہندگی بارے ریکارڈ طلب کیا نشاط احمد خان ڈاہا نے اس بل پر جو کہ سی این جی پمپ کا تھا اور اس پر ہائی کورٹ نے حکم امتناعی جاری کیا ہوا ہے اس وجہ سے محکمہ سوئی گیس کے اس اعتراض کو مسترد کرتے ہوئے کاغذات نامزدگی منظور کرلئے اسی طرح پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار صوبائی حلقہ206رانا محمدسلیم پر بھی محکمہ سوئی گیس نے 28ہزار روپے کی نادہندگی کا الزام لگایا تھا مگر مذکورہ امیدوار نے اس بل کی ادائیگی کا ثبوت فراہم کیا جس پر اس کے بھی کاغذات نامزدگی منظور کرلیئے ۔ کبیروالا ‘ بٹہ کوٹ سے نامہ نگار ‘ نمائندہ پاکستان کے مطابق الیکشن 2018کے سلسلہ میں پی پی 204میں کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال میں سردار شہباز احمد سیال,ملک آصف نائچ,رانا رؤف اسلم,منیر اکبر ہراج,مہر عباس ظفر ہراج,سید محمد شاہ گردیزی,سید ثقلین حیدر گردیزی,ملک اشرف تھہیم کے کاغذات درست قرار دیتے ہوئے قبول کر لئے گئے سابق تحصیل ناظم مہر ظفر احمد ہراج کے کاغذات پر بوقت سکروٹنی کوئی اعتراض سامنے نہیں آیا تھا تاہم بعد ازاں سٹیٹ بنک کی جانب سے ان کی والدہ کے نام پر بائیس لاکھ ساٹھ ہزار روپے واجب الادا ہونے کا پوائنٹ سامنے آیا اور ایک سال سے زائد مدت سے یہ رقم واجب الادا ہے ذرائع کے مطابق مہر ظفر احمد ہراج کو دوبارہ ریٹرننگ آفیسر کے پاس بلایا جائے گا اور اس کے بعد ان کے کاغذات کے بارے فیصلہ ہوگا۔دریں اثناء جلالپور پیروالا سے نامہ نگار کے مطابق این اے 150میں پندرہ امیدواروں میں سے دس امیدواروں کی سکروٹنی ہوچکی ہے اور ان کے کاغذات نامزدگی درست قرار دیتے ہوئے قبول کر لئے گئے ہیں ابتک این اے 150پر امیدواروں میں سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار بیرسٹر رضا حیات ہراج,مسلم لیگ ن کے امیدوار رئیر ایڈمرل (ر) سعید احمد سرگانہ,ایم ایم اے کے امیدوار طاہر محمود،آزاد امیدواران منیر اکبر ہراج،سید ناصر علی شاہ،رانا عرفان محمود،رانا عمران محمود،مولانا عبد المجید انور،مہر ظفر احمد ہراج اور عوامی خدمت گروپ کے مولانا عبد الخالق رحمانی کے کاغذات نامزدگی کی سکروٹنی ہوئی مگر کوئی اعتراض سامنے نہ آیا اور کاغذات درست پاتے ہوئے قبول کر لئے گئے ہیں آج سابق سپیکر قومی اسمبلی سید فخرامام,پیپلز پارٹی کے امیدوار اعجاز احمد خان یوسف زئی,مہر اکبر حیات ہراج اور رانا خاور تصدق کے کاغذات نامزدگی کی سکروٹنی ہوگی. جلالپور پیروالا سے نامہ نگار کے مطابق تحصیل جلال پور پیر والہ کی ایک قومی اور 2 صوبائی نشستوں کے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے دوران متعدد امیدواروں کے کاغذات نامزدگی منظور کر لیے گئے جب کہ چند امیدواروں کو سرکاری محکموں کے واجبات کی ادائیگی کے لیے آج صبح تک کی مہلت دے دی گئی۔ این اے 159 کے ریٹرننگ آفیسرایڈیشنل سیشن جج رانا عبدالحکیم نے عوامی راج پارٹی کے جمشید دستی، تحریک تبدیلی نظام پاکستان کے سربراہ نواب اقبال ایڈووکیٹ، تحریک لبیک پاکستان کے عباس لانگ، حاجی محمد اکرم، اشفاق کھاکھی، احمد حسّان بودلہ ، محمد شہزاد حسین اور ملک غلام عباس کھاکھی کے کاغذات نامزدگی منطور کر لیے جبکہ پی ٹی آئی کے رانا قاسم نون کے کاغذات نامزدگی کی منطوری کو محکمہ واپڈا کے واجبات اور ایک گاڑی کے ٹوکن کی ادائیگی سے مشروط کرتے ہوئے انہیں آج 19 جون تک کی مہلت دے دی، ابتدا میں رانا قاسم نون نے موقف اختیار کیا کہ ان کے والد کے نام سے لگی موٹر ٹربائن ان کے کبھی زیر استعمال نہیں رہی، انہوں نے شارٹ ٹوکن والی گاڑی کی ملکیت اور اس کے اپنے استعمال میں رہے جانے سے بھی انکار کیااور سرکاری محکموں کی طرف سے ان واجبات کی ادائیگی کو زیادتی قرار دیتے ہوئے اسے ’’چٹی‘‘ سے تعبیر کیا تاہم بعد ازاں انہوں نے واپڈا کے 2 بلوں کی مد میں 4 لاکھ 96 ہزار 96 روپے اور گاڑی کے ٹوکن کی مد میں 59 ہزار 900 روپے کی ادائیگی پر آمادگی ظاہر کر دی اور فوری طور پر بینک چیک دینے کا اظہار کیا لیکن ریٹرننگ آفیسر نے آج 19 جون کو ادائیگی کر کے رسیدیں بھجوانے کی ہدایت کر دی۔ دیوان محمد حیدر بخاری اور رانا شہر یار نون کے کاغذات نامزدگی فارمز کے ساتھ تجویز کنندہ اور تائید کنندہ کے شناختی کارڈز کی نقول لف نہ ہونے پر انہیں بھی آج مطلوبہ نقول فراہم کرنے کی ہدایت جاری کر دی گئی دیگر امیدواروں جن میں مسلم لیگ ن کے دیوان ذوالقرنین بخاری، سابق ایم این اے دیوان عاشق حسین بخاری، سابق صوبائی وزیر نغمہ مشتاق لانگ، سابق ایم پی اے مہدی عباس لنگاہ، رانا شاہزیب نون، خواجہ محمد صدیق صدیقی اور سرائیکی ملت پارٹی کے سربراہ اصغر خان نہڑ ایڈووکیٹ کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال آج ہو گی۔ ذرائع کے مطابق آج رانا قاسم نون مدمقابل دیوان عاشق حسین بخاری کی سپریم کورٹ سے تاحیات نااہلی اور ان کے بیٹے دیوان ذوالقرنین بخاری کی دُہری شہریت کے حوالے سے اعتراضات داخل کریں گے۔ صوبائی حلقہ 222 کے 14 امیدواروں میں سے سوموار کو صرف 5 امیدواروں کو طلب کیا گیا تھا ریٹرننگ آفیسر سول جج مدثر نوازنے جمیعت علمائے اسلام ف کے متوقع امیدوار مولانا محمد یوسف اور متحدہ مجلس عمل کے متوقع امیدوار احمد حسان بودلہ کے کاغذات نامزدگی منظور کر لیے حاجی محمد اکرم، ملک محمد بخش لانگ اور رانا قاسم نون کو سرکاری محکموں کے واجبات کی ادائیگی ہو جانے کا ثبوت فراہم کرنے کے لیے آج تک کی مہلت دے دی گئی۔ حاجی محمد اکرم پر ایک گاڑی کے ٹوکن کی عدم ادائیگی کا الزام تھا حاجی محمد اکرم نے موقف اختیار کیا کہ وہ کئی سال قبل اس گاڑی کو فروخت کر چکے ہیں، ملک محمد بخش لانگ نے واپڈا کے 11 لاکھ روپے کے بل کے حوالے سے موقف اختیار کیا کہ یہ بل ان کے ذمہ غلط طور پر ڈالا گیا تھا بل کی درستگی کے لیے محکمہ کو پہلے ہی تحریری درخواست دی ہوئی ہے۔ سوموار کو صوبائی حلقے پی پی 223 کے ریٹرننگ آفیسر سول جج فراز ارشد نے بھی متعدد امیدواروں کو کاغزات نامزدگی کی جانچ پڑتال کی غرض سے طلب کیا ہوا تھالیکن محکمہ ایف بی آر کی طرف سے امیدواروں کی نادھندگی بارے مواد موصول نہ ہونے کی بنأ پرتمام امیدواروں کو کاغذات نامزدگی کی جانچ پرتال آج طلب کر لیا ہے۔ پنجاب کے دیگر علاقوں کی طرح آج چھٹی کے روز جام پور میں بھی ریٹرنگ افیسروں نے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کی۔ حلقہ این اے 193پر تمام امیدواروں کے کاغذات نامزدگی فارم درست پائے گئے۔ آج مورخہ انیس جون کو حتمی لسٹ شائع کی جائے گی۔ تفصیل کے مطابق چھٹی کے روز ریٹرنگ افسیر جام پور محمدرضوان عارف نے حلقہ این اے193پر امیدواروں کے کاغذات نامزدگی فارموں کو چیک کیا ۔ مخالف امیدوار شیرعلی گورچانی کی طرف سے جعفرخان لغاری پر قرضے معاف کرانے کا الزام عاہد کیا ۔جس کا سردار جعفرخان لغاری نے تبوت دیا کہ حکومت کی طرف سے کوئی قرضہ معاف نہیں کرایا ۔اسی طرح نصر اللہ دریشک اور علی رضادریشک پر بھی شوگرز ملز پر قرضے معاف کرانے کا الزام لگایا جس کے جواب میں امیدوارں نے جواب جع کرادیا کہ بنک کی پالیسی کے مطابق سب کچھ قواعد وضوابط کے زریعہ کیا ہے۔ جس پر امیدواروں نے اپنے کاغذات ثبوت کے طورپر پیش کیے ۔ عدالت نے کاغذات نامزدگی فارم منظور کر لیے۔ اسی طرح اطہر حسین گورچانی۔ احمد خان لغاری۔ عدیل حسن گورچانی شیر علی گورچانی۔ شیر زمان گورچانی ۔سردار جعفر خان لغاری۔ محسن خان لغاری۔ سردارعلی رضا خان دریشک۔ شفقت اللہ۔ شازیہ عابد ایڈوکیٹ۔ ۔ فرید الدین کوریجہ سمیت تمام امیدواروں کے خاغذات منظور کیے گئے ۔ اسی طرح حلقہ پی پی 293اور حلقہ پی پی 294پر امیدواروں کے کاغذات کی جانچ پڑتال بھی کی گئی ۔ علی رضادریشک۔ نصر اللہ دریشک۔ ودیگر کو اج دو بجے طلب کیا گیا ہے۔ کاغذات نامزدگی فارموں کی سیکرونٹی کے دوان کارکنان ۔ امیر مجد پتافی ایڈوکیٹ۔ شمشیر حیدر ایڈوکیٹ۔ گل شیر ڈھانڈلہ۔ حسین فریدی کھچیلہ۔ امام بخش لنگرانہ۔عبدالکریم خان ڈھول۔ عبدالمجید خان ڈھول۔ رفیق خان گجر ۔ صدر بار جام پور جام ناصر خان برڑہ۔ رانا محمد ایوب ایڈوکیٹ۔ جام کاظم گڈن۔رانا قدیر خان۔ سید جلال حسین شاہ۔ ڈاکٹر مرید حسین لنگاہ۔ سمیت دیگر موجود تھے۔ تونسہ سے تحصیل رپورٹر کے مطابق قومی اور صوبائی اسمبلی کے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا کام مکمل ہوگیا 19جون کو ریٹرنگ آفیسر ضلع ڈیرہ غازیخان کے نامور سیاسی پہلوانوں کی اہلی یا نا اہلی کے فیصلے دیں گے ان امیدواروں میں میاں شہباز شریف سردار اویس خان لغاری سردار محمد خان لغاری سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ سردار دوست محمد خان کھوسہ سردار محسن عطا کھوسہ سردار امجد فاروق خان کھوسہ سردار جاوید اختر خان لنڈ سردار عثمان خان بزدار خواجہ شیراز محمود سردار میر بادشاہ قیصرانی مسز شمعونہ بادشاہ قیصرانی خواجہ محمد داود خان سلیمانی و دیگر امیدواروں کے آج فیصلے ہوں گے کہ کیا تمام امیدوار الیکشن لڑنے کے اہل ہوں گے یا پھر کچھ نا اہل ہوں گے ۔ فتح پور سے نامہ نگار کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کروڑ کے تحصیل صدر اور حلقہ پی پی 280 کے امیدوار چوہدری انعام الحق ایڈووکیٹ کے کاغذات نامزدگی ریٹرنگ آفیسر نے منظور کرتے ہوئے انہیں الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی، کاغذات نامزدگی منظور ہو نے کی خبر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور پیپلز پارٹی کے جیالے کارکنان و ورکرز اور دوست احباب نے بھنگڑے ڈالنے شروع کر دیئے اور مٹھائیاں تقسیم کیے اور چوہدری انعام قدم بڑھاؤ ہم تمہارے ساتھ ہیں کے نعرے لگائے ، چوہدری انعام کے کاغذات منظور ہو نے کی خبر نے فتح پور کی سیاسی صورت حال میں ہلچل پیدا کر دی ، جس کے بعد چوہدری انعام الحق کی مستحکم سیاسی پوزیشن عوام میں زیر بحث ہے۔ مٹھن کوٹ سے نمائندہ خصوصی ‘ نامہ نگار کے مطابق سرا ئیکستان صو بہ کے چیئرمین خوا جہ غلام فرید کو ریجہ کے کا غذات نا مزد 195این اے اور پی پی296منظور اس موقع پر خوا جہ غلام فرید کو ریجہ نے گفتگو کرتے ہو ئے انہو ں نے کہا جا گیر دار اور سر ما یہ دار سیا سی قیا دت سرا ئیکی وسیب کی ترقی کے در میان روکا وٹ سرا ئیکی صو بہ کے قیام کیلئے جا گیر دار ی اور سر ما یہ دار بریت کو توڑ نا ہو گا ووٹ ایک امانت ووٹ کا کے غلط استعما ل سے بالا دست طبقہ نے کمزورو ں اور سرا ئیکی وسیب کے عوام کا استحصال کیا کا شتکا رو ں کا استحصال کر نے والو ں کا محا سبہ کر یں گے جنو بی پنجا ب صو بہ محا ذ وا لے سرا ئیکی وسیب کی شنا خت کے دشمن اور تخت لا ہور کے ایجنٹ تخت لا ہور کے تنخوا ہ دارو ں جنو بی پنجاب محاذ کے سا تھ سرا ئیکی عوام ان کو مستر د کر دیں صو بہ ہم بنا ئیں گے کا میا بی ملی تو را جن پور سرا ئیکی وسیب کی عوام کی آوا ز بلند کر یں گے اس موقع پر محسن جھنگوی و دیگر مو جود تھے ۔ جتوئی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق جتوئی؛سابق صوبائی پارلیمانی سیکریٹری چنوں خان لغاری کے کاغزات نامزدگی خارج قیوم جتوئی ،داؤد جتوئی پی پی 275منظور سمیع اللہ لگاری کی درخواست پر بحث کل ہوگیتفصیل کے مطابق الیکشن 2018کے سلسلہ میں آج ریترننگ آفیسر پی پی 275میں سباق صوبائی پارلیمانی سیکریٹری سردار چنوں کے لغاری کے کاغزات نامزدگی 62,63کے تحت تاحیات نااہل ہونے کی وجہ سے درخواست نامزدگی خارجکردی گئی جبکہ انکے بھائی سمیع اللہ لغاری کی درخواست پر سماعت کل ہوگی سابق وفاقی وزیر دفاعی پیداوارسردار عبدالقیوم جتوئی،انکے صاحبزادے داؤد جتوئی کے کاغزات نامزدگی منظور کرلئے گئے1۔
سکرونٹی