مصر کے سابق صدر  محمد مرسی کی اسلام، آئین کی بالادستی اور جمہوریت کیلئے  قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کی قرارداد سینیٹ سیکرٹریٹ میں  جمع

 مصر کے سابق صدر  محمد مرسی کی اسلام، آئین کی بالادستی اور جمہوریت کیلئے  ...
 مصر کے سابق صدر  محمد مرسی کی اسلام، آئین کی بالادستی اور جمہوریت کیلئے  قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کی قرارداد سینیٹ سیکرٹریٹ میں  جمع

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) مصر کے سابق صدر  محمد مرسی کی اسلام، آئین کی بالادستی اور جمہوریت کیلئے  قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کی قرارداد سینیٹ سیکرٹریٹ میں  جمع کروا دی گئی ، اپوزیشن جماعتوں کے  35ارکان سینیٹ نے قرارداد پر دستخط کیے ہیں، قرارداد کے محرک  جماعت اسلامی پاکستان کے رہنما  سینیٹر مشتاق احمد ہیں۔

تفصیلات کے مطابق مصر کے مرحوم صدر محمد مرسی کی قربانیوں اور خدمات کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے پاکستان پیپلزپارٹی ، پاکستان مسلم لیگ ن، پختونخوا ملی عوامی پارٹی، بلوچستان ، نیشنل پارٹی اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کے ارکان سینیٹ کے دستخطوں سے  قرارداد سینیٹ سیکرٹریٹ میں جمع کروا دی گئی، 35ارکان سینیٹ نے قرارداد پر دستخط کیے ہیں، حکومت کی طرف سے بھی قرارداد کی حمایت متوقع ہے۔ایوان بالا کی کارروائی کے دوران اپوزیشن جماعتوں کے 35ارکان سینیٹ نے  جماعت اسلامی کی اس قرارداد پر دستخط کیے، سابق فوجی صدر کی گرفتاری، جیل میں ان کے ساتھ انتہائی نامساعد حالات، بدسلوکی کی سخت الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ سینیٹ آف پاکستان مصر کے سابق صدر محمد مرسی کے جیل میں دوران تفتیش انتقال پر گہرے غم و دکھ اور افسوس کا اظہار کرتا ہے۔ ڈاکٹر محمد مرسی کی جمہوریت کی بحالی، پارلیمان، آئین، سول حکمرانی اور قانون کی بالادستی کے لئے کی گئی جدوجہد اور قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔ جس کو پوری دنیا کے جمہوریت پسند بالعموم اور مصر کی آنے والی نسلیں بالخصوص قدر و احترام کی نگاہ سے دیکھیں گی۔قرارداد میں ڈاکٹر مرسی کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ محمد مرسی جمہوریت کی بالادستی، آئین و قانون کی پاسداری اور سول طرز حکمرانی پر یقین رکھنے والوں کے لئے عزم اور حوصلے کا نشان بن گئے ہیں۔ سینیٹ آف پاکستان محمد مرسی کے ظلم، جبر، اور ایذا رسانی کے خلاف ان کی ثابت قدمی پر انہیں خراج تحسین پیش کرتا ہے۔ان کی جدوجہد اور قربانیاں دنیا کے ان رہنماؤں سے مماثلت رکھتی ہیں جن میں بعض کا تعلق پاکستان سے بھی ہے جو ظالم اور آمر کے سامنے سرنگوں نہیں ہوئے۔

قراراداد کے مطابق مرسی عرب انقلاب کا درخشاں ستارہ تھے،ان کی عظیم قربانی ہمیشہ کے لئے ان قوتوں کے لئے امید اور روشنی کا مینار رہے گی جو آمریت اور جبر کے مقابلے میں مہذب زندگی کو ترجیح دیتے ہیں،عالمی طاقتوں نے جس طرح سے محمد مرسی اور دوسرے مصری سیاسی قیدیوں کے حوالے سے بے حسی، غفلت اور چشم پوشی کا مظاہرہ کیا ہے، سینیٹ آف پاکستان اس پر انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ہیومن رائٹس واچ کے مطالبے کی مکمل تائید اور حمایت کرتی ہے جس میں انہوں نے محمد مرسی کی موت کا اعلی سطحی عدالتی کمیشن کے ذریعے تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

سینیٹ آف پاکستان حکومت وقت سے مطالبہ کرتا ہے کہ جمہوری حکومتوں کو آمریت اور غیر منتخب قوتوں کی مہم جوئی سے بچانے کے لئے اس موقع کو ''لیگ اف ڈیموکریٹک ا سٹیٹس '' کے قیام کے لئے استعمال کرتے ہوئے اس حوالے سے اقدامات کرے۔ قرارداد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیاکہ وہ  مصری حکومت اور حسب ضرورت دیگر اسلامی ممالک تک رسائی کرے تاکہ مصر میں قید سیاسی قیدیوں کو صاف و شفاف عدالتی ٹرائل کا اور وہ سہولیات اور حقوق مل سکیں جو اقوام متحدہ اور یو این ایچ سی آر کے چارٹر شامل ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد