غیر قانونی فنڈنگ کیس، جماعت الدعوۃ کے 4رہنماؤں کو قید، جرمانے کی سزائیں

غیر قانونی فنڈنگ کیس، جماعت الدعوۃ کے 4رہنماؤں کو قید، جرمانے کی سزائیں

  

لاہور(نامہ نگار)انسداد دہشت گردی کی عدالت نمبر تین کے جج اعجاز احمد بٹر نے کالعدم جماعت سے تعلق رکھنے اور غیر قانونی فنڈنگ کیس میں ملوث 4مجرموں کوقید و جرمانے کی سزاکا حکم سنادیاہے،انسداد دہشت گردی کی عدالت نے جماعت الدعوۃ کے چار رہنماؤں کومختلف سزائیں سنائی ہیں،عدالت نے مجرموں پروفیسر ظفر اقبال اور یحییٰ مجاہد کو5،5سال قیدبامشقت اور 50، 50 ہزار روپے جرمانہ کی سزا کاحکم سنایاہے جبکہ پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی اور حافظ عبدالسلام بن محمد کو ایک ایک سال قید اور 20،20ہزار روپے جرمانہ کی سزاکا حکم سنایاہے۔،حافظ عبدالسلام بن محمد کو ایک سال قید بیس ہزار جرمانہ کی سزا سنا دی، مجرموں کے خلاف عدالت میں کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی)کی طرف سے درج مقدمہ نمبر 20/19 میں تمام گواہوں کے بیانا ت ریکارڈ کروانے کے بعد فاضل جج نے وکلاء کے دلائل سنتے ہوئے مذکورہ بالاحکم جاری کیاہے،یادرہے کہ عدالت کی جانب سے چند ماہ قبل جماعت الدعوۃکے مرکزی رہنما حافظ محمد سعید اور پروفیسر ظفر اقبال کو بھی مجموعی طور پر 11،11سال قید کی سزا سنائی جاچکی ہے۔

غیر قانونی فنڈنگ کیس

مزید :

صفحہ آخر -