پسند کی شادی کرنیوالی نومسلم خاتون لاہور ہائیکورٹ پیش

پسند کی شادی کرنیوالی نومسلم خاتون لاہور ہائیکورٹ پیش

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ میں ننکانہ صاحب کی نو مسلم خاتون عائشہ نے اپنے شوہر حسن کے ساتھ جانے کابیان دے دیا،خاتون کو سخت حفاظتی اقدامات میں دارلامان سے لاکر لاہورہائی کورٹ میں پیش کیا گیا،خاتون نے کہا کہ اس نے اپنی مرضی کے ساتھ حسن سے شادی کی ہے،وہ دارالامان میں نہیں رہناچاہتی وہ اپنے شوہر کے ساتھ جاناچاہتی ہے،گزشتہ روز خاتون کے سکھ والدین کے وکلاء عدالت میں پیش نہیں ہوئے جس کے باعث کیس کی مزید سماعت25جون پر ملتوی کردی گئی،عائشہ اور اس کے شوہر نے درخواست دائر کررکھی ہے کہ عائشہ کے اسلام قبول کرکے حسن کے ساتھ شادی کے بعد انہیں ہراساں کیاجارہاہے،دوسری طرف عائشہ کے والدین نے اس کی بازیابی کے لئے درخواست دائر کررکھی ہے،عدالت نے ابتدائی سماعت پر ہی خاتون کو دارالامان بھجوادیا،جہاں سے لاکر اسے عدالت میں پیش کیا گیا۔

پسند کی شادی

مزید :

صفحہ آخر -