آٹا،چینی بحران کیس،وفاق اور نیب کے رویے پر لاہور ہائیکورٹ برہم

        آٹا،چینی بحران کیس،وفاق اور نیب کے رویے پر لاہور ہائیکورٹ برہم

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے آٹا اور گندم بحران سے متعلق درخواست پر سماعت کرتے ہوئے وفاقی حکومت اور نیب سمیت دیگر اداروں کو جواب جمع کروانے کی آخری مہلت دے دی،مسٹرجسٹس ساجد محمود سیٹھی نے ریمارکس دیئے کہ وفاقی حکومت کا رویہ درست نہیں ہے۔۔تفصیلات کے مطابق جسٹس ساجد محمود سیٹھی درخواست پر سماعت کی درخواستگزار نے بتایا کہ ملک میں گندم اور چینی کی قیمتیں بڑھتی رہیں، مسابقتی کمشن سویا رہا،درخواست گزار کے مطابق گندم اور چینی بحران کے پیچھے ایک مافیا ہے جسے طاقتور حلقوں کی حمایت حاصل ہے گندم اور چینی کا بحران پیدا کرکے چند مخصوص افراد نے اپنی جیبیں بھریں، درخواست گزار نے استدعا کی کہ گندم او چینی بحران کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کا حکم دیا جائے دوران سماعت وفاقی حکومت اور نیب کی جانب سے جواب جمع نہ کروانے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا اور ریمارکس دیے کہ وفاقی حکومت کا رویہ درست نہیں۔ عدالت نے وفاقی حکومت اور نیب سمیت دیگر اداروں کو جواب جمع کروانے کی آخری مہلت دیدی اور کاروائی 24جون تک ملتوی کردی۔عدالت گندم اور آٹے کے بحران پیدا کرنے کے خلاف دائر درخواست پرسماعت 24 جون کو کریں گئی۔

اظہار برہمی

مزید :

صفحہ آخر -