پلازمہ کو بلیک میں فروخت کرنا سنگین جرم ہے،اسلم صدیقی

پلازمہ کو بلیک میں فروخت کرنا سنگین جرم ہے،اسلم صدیقی

  

لاہور(سٹی رپورٹر) چیئر مین پاکستان علما ء کونسل کے معا ؤ ن خصو صی علامہ محمد اسلم صد یقی نے کہا ہے کہ پلازمہ کی فروخت شرعاً درست نہیں ہے، عام حالات میں بھی خون کی خرید و فروخت کرنا حرام ہے، کسی کی مجبوری کا فائدہ اٹھانا سنگین جرم ہے، پلازمہ کو بلیک میں لاکھوں روپے میں فروخت کرنا ایک سنگین ترین جرم ہے۔ انہو ں نے کہاکہ اسلام انسانیت کی بقا اور سلامتی کا دین ہے اور کسی ایک فرد کی جان بچانا پوری انسانیت کی جان بچانے کے مترادف ہے۔

،پلازمہ کی فروخت شرعا درست نہیں ہے اور اس طرح کا عمل کرنے والا قانونی اور شرعی مجرم ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ عوام کسی دھوکے میں نہ آئیں،غیر معیاری پلازمہ خریدنے سے آپ کے مریض کی جان کو خطرہ ہو سکتا ہے، پاکستان میں بسنے والے درندہ صفت انسانوں نے کرونا سے صحتیابی کیلئے ضروری پلازمہ کو کاروبار کا ذریعہ بنالیا جو انتہا ئی شرم ناک اور قا بل مذ مت عمل ہے اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -