تنخواہوں میں اضافہ نہ کرنے پر: صوبے کے تمام اضلاع میں سرکاری دفاتر میں قلم چھوڑ ہڑتال کا آغاز

تنخواہوں میں اضافہ نہ کرنے پر: صوبے کے تمام اضلاع میں سرکاری دفاتر میں قلم ...

  

صوابی(بیورورپورٹ)آل پاکستان کلرکس ایسو سی ایشن صوبہ خیبر پختونخوا نے موجودہ وفاقی بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کرنے کے خلاف جمعرات کے روز سے صوبے کے تمام اضلاع میں سرکاری دفاتر میں قلم چھوڑ ہڑتال کاآغاز کر دیا۔ اس احتجاجی تحریک کا اعلان گذشتہ روز ضلعی صدر ایپکا صوابی ذاکر اللہ عمر خیل کے حجرہ صوبائی سینئر نائب صدر نجم الدین حقانی کی صدارت میں منعقدہ اجلاس میں کیا گیا۔ انہوں نے وفاقی بجٹ کو یکسر مسترد کر تے ہوئے مطالبہ کیا کہ حکومت بجٹ پر نظر ثانی کر کے تمام ایڈہاک ریلیف کو بنیادی تنخواہوں میں ضم کر کے نئے پے سکیل کا اعلان کر نے کے علاوہ ہاؤس رینٹ نئے پے اسکیل پر یکساں رائج کیا جائے۔ 2001سیلنگ کا خاتمہ کر کے تمام سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور میڈیکل الاؤنس میں موجودہ مہنگائی کے تناسب سے فوری طور پر اضافہ کیا جائے۔ تنخواہوں اور الاؤنس میں تفریق ختم کر کے یکساں نظام رائج کیا جائے۔ صوبائی بجٹ میں صوبہ بھر کے تمام سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے۔کلرکس برادری کے لئے ٹائم سکیل کا فوری طور پر اجراء کیا جائے اسی طرح ملازمین کے پنشن میں بیس فیصد اضافہ کیا جائے۔انہوں نے اعلان کیا کہ مطالبات تسلیم نہ ہونے تک ہڑتال جاری رہے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -