ملازمین کی تنخواہوں میں 50 فیصد اضافہ کیا جائے،عبدالستار

ملازمین کی تنخواہوں میں 50 فیصد اضافہ کیا جائے،عبدالستار

  

پشاور (سٹی رپورٹر)آل سی ایندڈ بلیو پی ڈبلیو ڈی ایمپلائز یونین خیبر پختونخوا نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ تمام حاضر سروس ملازمین کی تنخواہیں اور الاونسز میں مہنگائی کے تناسب سے 50فیصد اضافہ کیلئے بجٹ میں نظر ثانی کی جائے جبکہ آٹھاوریں ترمیم کی روشنی میں صوبائی ملازمین کو بجٹ میں یکساں یوٹلیٹی الاونس دینے کا اعلامیہ جاری کیا جائے اور پبلک و نجی سیکٹر محن کشوں کیلئے خصوصی ریلیف پیکج کا اعلان کیا جائے جبکہ محنت کشوں کے دیگر مسائل کے حوالے سے اقدامات اٹھائے جائے اور اعلان کیا کہ یونین 19جون سے ایک ہفتہ کیلئے سرکاری دفاتر اور دیگر جگہوں پر ہڑتال کریگی اور بینرز اویزاں کیے جائے گے اور مطالبات پورنے نہ ہونے کی صورت میں صوبہ گیر احتجاجی تحریک چلاینگے۔پشاور پریس کلب میں مزدور رہنما اور آل سی ایندڈ بلیو پی ڈبلیو ڈی ایمپلائز یونین خیبر پختونخوا کے صوبائی صدر عبدالستار خان ہوتی،ضلع پشاور کے صدر روح اللہ مومند،جی ایس پرویز خان نے دیگر عہدیداران کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے پہلی بار تبدیلی والا بجٹ میں مزدور اور محنت کشوں کو مکمل طور پر نظر انداز کیا ہے جبکہ اس بجٹ کو مسترد کرتے ہے کیونکہ مہنگائی نے غریب عوام اور کم تنخواہ دار اور مزدور طبقے کا جینا حرام کر رکھا ہے اور حکومت مہنگائی کو کنٹرول کرنے میں مکمل بے بس ہو چکی ہے۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی کسی بھی ملک کی ترقی محنت کش طبقے کے بغیر ممکن نہیں کیونکہ محنت کش طبقہ ملک کی مشینری میں ریڑھ کی ہڈی کی حثیت رکھتا ہے اور حکومت وقت کی ذمہ داری ہوتی ہے کہ انکی ضروریات پورے کرنے کیلئے بہترین قانون سازی کریں انہوں نے کہا کہ موجودہ حالات میں جہاں ہر طرف خوف و حراس کی فضاء ہی وہی مہنگائی نے غریب مزدور طبقہ اور کم تنخواہ دار کو ٹرپ تڑپ کر زندگی گزارنے پر مجبور کر رکھا ہے جبکہ حکومت اس سارے صورت حال پر چشم پوشی اختیار کی ہوئے ہے عہدیداران نے مطالبہ کیا کہ حکومت تمام حاضر سروس ملازمین کو بجٹ میں مہنگائی کے تناسب سے تنخواہوں اور الاونسز میں پچاس فیصد اضافہ کریں،عبوری الاونسز کو بنیادی تنخواہوں میں ضم کرنے،ریٹائرڈ ملازمین کے پینشن اور الاونسز میں اضافہ سمیت اٹھاوریں ترمیم کے تحت صوبائی ملازمین کو بجٹ میں یکساں یوٹیلیٹی الاونس دینے کا اعلان کریں جبکہ عوامی اور نجی شعبہ کے محنت کشوں کیلئے فوری طور پر خصوصی ریلیف پیکج کا اعلان کرنے کیسا ساتھ ہر سطح کے محنت کشوں کیلئے کم از کم بنیادی تنخواہ تیس ہزار روپے اور پینشن بھی یکساں ادائیگی کیلئے اقدامات یقینی بنائے اور مطالبات کے حصول کیلئے 19جون سے دفاتر میں ایک ہفتہ کیلئے ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے مطالبات کی عدم تکمیل کی صورت میں صوبہ گیر احتجاج کی دھمکی دی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -