سر کاری ملازمین کے صوبائی دار لحکومت آمد کا سلسلہ جاری

سر کاری ملازمین کے صوبائی دار لحکومت آمد کا سلسلہ جاری

  

دیر بالا(نمائندہ پاکستان) سر کاری ملازمین کے صوبائی دار لحکومت آمد کا سلسلہ جاری ہے۔اپنی حقوق کیلئے نکلے ہیں۔حکومت نے روکنے کی کو شش کی تو وہاں پر دھرنا دینگے۔ان خیالات کا اظہار تنظیم اساتذہ خیبر پختونخو کے صدر خیر اللہ خان حواری نے اپنے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کیا ہے۔پریس ریلیز کی مطابق خیبرپختونخوا کے دولاکھ معماران قوم اور ملازمین اپنی بقاء اور دو نہیں ایک پاکستان کے لئے 19جون کو2بجے صوبائی اسمبلی کے سامنے دھرنے میں شرکت کے لئے پشاور کا رخ کریں گے۔ دور دراز مقامات سے رات دیر تک ملازمین کے پشاورآمد کا سلسلہ جاری ہے۔ اگرحکومت نے قافلوں کو روکنے کی کوشش کی تو وہی پر دھرنے دیئے جائیں گے۔ تمام ملازمین اور اساتذہ اپنے جائزہ حقوق کے لئے قربانی دیکر دھرنے میں شرکت کیلئے نکلے ہیں۔خیراللہ حواری اورمیڈیا ترجمان میاں ضیاء الرحمان نے مشترکہ جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا ہے کہ صوبائی حکومت دھرنا سے پہلے کی صوبائی حکومت بجٹ میں ملازمین کو سرپرائز دیکر الاؤ نسز میں تفاوت کو ختم کرنے،خواتین ملازمات کے لئے ماہوار 5000روپے محرم الاؤنسکے اجراء کے ساتھ ساتھ تنخوا ہ، پنشن، الاؤنسز میں 100فیصد اضافے کا اعلان کریں۔ان کا کہنا تھا کہ اال کوارڈینیشن کو نسل کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے۔کہ اب اپنے حقوق حاصل کئے بغیر واپس نہیں جائینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -