موجودہ بجٹ غریب اور ملازم کش ہے،اے این پی صوابی

موجودہ بجٹ غریب اور ملازم کش ہے،اے این پی صوابی

  

صوابی(بیورورپورٹ) اے این پی ضلع صوابی نے وفاقی بجٹ کو یکسر مسترد کر تے ہوئے اسے غریب اور ملازم کش بجٹ قرار دیا۔اور کہا کہ بجٹ میں سرکاری ملازمین اور غریب عوام کے لئے کسی قسم کا ریلیف نہیں دیا گیا۔اس سلسلے میں عوامی نیشنل پارٹی ضلع صوابی کے صدر حاجی امان اللہ خان جنرل سیکرٹری نواب زادہ نے مشترکہ اخباری بیان کہا کہ موجودہ حکومت نے مایوس کن بجٹ پیش کی اس بجٹ میں غریب عوام کو کوئی ریلیف نہیں ملا ائے روز سے ضرورت ایشیا کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں۔ ایک طرف حکومت خود اقرار کر رہی ہے کہ مہنگائی میں دس فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا ہے تو دوسری طرف غریب ملازمین کی تنخواہیں بڑھانے سے انکار کر رہی ہے جو کہ سراسر نا انصافی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ ملازمین کا معاشی قتل کر دیا گیا ہے یہ پاکستانی تاریخ کی پہلی ایسی حکومت ہے جو کہ غریبوں کا ذریعہ معاش روک کر صنعت کاروں اور سرماریہ داروں کو ریلیف دے رہی ہے۔ حالانکہ پچھلی حکومتوں میں غریبوں کو ہر بجٹ میں کافی ریلیف ملتا رہا ہے۔ موجودہ ناتجربہ کار حکومت کے پاس کوئی وژن نہیں بس صبح شام صرف تقریریں کرتے ہیں باقی عملی کام صفر ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ غریب سرکاری ملازمین سے روٹی کا نوالہ نہ چھینا جائے انہیں بجٹ میں ترمیم کر کے کم از کم دس فیصد ریلیف دیا جائے تاکہ یہ لوگ بھی اپنی زندگی بہتر طریقے سے بسر کر سکے۔ لاک ڈاؤن کی وجہ سے غریب تو کیا درمیانی تفقہ کے لوگ بھی زلیل ھوئے ھیں جن لوگوں کے پاس تھوڑے سے پیسے تھیں وہ بھی ختم ھوئے اور اجکل در پہ در ھیں اور پاکستان کے تاریخ میں پہلی بار سرکاری ملازمینوں کے ساتھ بجٹ میں سوتیلی ماں کی سلوک ھوا 2019/2020 میں ضرورت ایشیاء کی دو سو فیصد مہنگے ھوئے ھیں اور اس بجٹ میں میں ضرورت ایشیاء قیمتوں کوئی ریلیف نہیں ملا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -