سندھ پولیس کی دوران چھاپہ گھر میں لوٹ مار، کتنا مال لوٹ لیا؟ متاثرہ خاندان کا بڑا دعویٰ سامنے آگیا

سندھ پولیس کی دوران چھاپہ گھر میں لوٹ مار، کتنا مال لوٹ لیا؟ متاثرہ خاندان کا ...
سندھ پولیس کی دوران چھاپہ گھر میں لوٹ مار، کتنا مال لوٹ لیا؟ متاثرہ خاندان کا بڑا دعویٰ سامنے آگیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) کورنگی انڈسٹریل میں مقیم ایک خاندان نے دعویٰ کیا ہے کہ شکار پور سے آئی ہوئی پولیس ٹیم نے ان کے گھر میں چھاپے کے دوران نہ صرف اہلخانہ کو تشدد کا نشانہ بنایا بلکہ لوٹ مار کرتے ہوئے نقدی اورزیورات بھی لے گئے۔

جیو نیوز کے مطابق متاثرہ خاندان کے فرد عرفان علی نے بتایا ہے کہ گزشتہ روز کورنگی انڈسٹریل ایریا، بلال کالونی میں چھاپے کے دوران پولیس اہلکاروں نے ان کی والدہ کو مارا پیٹا اور گھسیٹا بھی جس سے وہ بے ہوش ہوگئیں جب کہ پولیس اہلکار گھر سے 3 لاکھ روپے اور 3 تولہ سونابھی لوٹ کر لے گئے۔ 

عرفان علی نے بتایا کہ پولیس اہلکاروں نے بتایا کہ ان کا تعلق شکارپور سے ہے ۔ وہ بنا کسی لیڈی پولیس اہلکار گھر میں گھسے اور گھر میں موجود ایک مہمان کو بھی اپنے ہمراہ لے گئے۔

عرفان علی کا کہنا تھا کہ واقعہ کے وقت وہ گھر پر نہیں تھے،گھر پہنچ کر 15 پر پولیس کو اطلاع دی تو انہوں نے کہا آئی جی کمپلین نمبر 9110 پر فون کریں تاہم اس نمبر پر کسی نے فون نہیں اٹھایا جس کے بعد  واقعہ کے خلاف ایڈیشنل آئی جی کو شکایت بھیجی ہے۔

دوسری جانب کورنگی انڈسٹریل پولیس کا کہنا ہے کہ شکارپور سے چھاپے کے لیے آنے والی پولیس پارٹی نے تھانے میں چھاپے کی انٹری کرائی تھی، پولیس پارٹی کا کہنا تھا کہ وہ لوگ قتل کے ملزم کی گرفتاری کے لیے آئے ہیں۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -سندھ -کراچی -