کورونا وائرس کے علاج کیلئے تجویز کردہ انتہائی سستی دوا فارمیسیوں سے غائب ہوگئی، پاکستانی تاجروں نے ایک اور شرمناک کام کردیا

کورونا وائرس کے علاج کیلئے تجویز کردہ انتہائی سستی دوا فارمیسیوں سے غائب ...
کورونا وائرس کے علاج کیلئے تجویز کردہ انتہائی سستی دوا فارمیسیوں سے غائب ہوگئی، پاکستانی تاجروں نے ایک اور شرمناک کام کردیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )برطانیہ میں حال ہی میں مشہور سٹیرائڈ ” ڈیکسا میتھا سون “ کو کورونا وائرس کے خلاف مفید قرار دیا تھا اور بتایا گیا تھا کہ آکسیجن اور وینٹی لیٹر پر موجود افراد کی زندگی بچانے کیلئے اہم دوا ہے تاہم جیسے ہی یہ تحقیق منظر عام پر آئی تو یہ خبر ذخیرہ اندوزوں تک بھی پہنچ گئی جس کے بعد اب یہ کراچی ، پشاو ر اور اسلام آباد سمیت تقریبا ملک بھر کے میڈیکل سٹورز سے ڈیکسا میتھا سون غائب ہونا شروع ہو گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق مذکورہ دوا کی گولیاں اورانجکشن پاکستان میں انتہائی کم قیمت پر دستیاب تھے جو گزشتہ 2 روز سے مارکیٹ میں نایاب ہوچکے ہیں۔ پاکستان کیمسٹ اینڈ ڈرگ ایسوسی ایشن کے مطابق ڈیکسامیتھا سون انجکشن کی ہول سیل قیمت 450 روپے ، ریٹیل قیمت 550 روپے تھی لیکن جیسے ہی ذخیرہ اندوزی شروع ہوئی تو اسکی قیمت 800 سے ایک ہزار روپے تک جا پہنچی۔ علاوہ ازیں وزارت قومی صحت نے مجوزہ دوا کی قلت کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے فروخت کے لئے شرائط عائد کر دیں۔ ڈ

رگ ریگولیٹری اتھارٹی کی طرف سے جاری ایڈوائزری کے مطابق دواصرف رجسٹرڈ ڈاکٹر کے نسخہ پر فروخت کرنے کی اجازت ہے۔ فارمیسز فروخت کا مکمل ریکارڈ محفوظ رکھیں۔ ڈسٹری بیوٹرز، فارمیسز دوا کی دستیابی یقینی بنائیں۔ علاوہ ازیں ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ کسی کو بلیک مارکیٹنگ اور ذخیرہ اندوزی کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ دوا ملک میں کافی مقدار میں موجود ہے ، مصنوعی قلت کرنے والے مافیا کے خلاف قانونی کارروائی کی جا ئے گی۔ ادھر پشاورمیں بھی دوا کی ذخیرہ اندوزی پر پابندی عائد کر دی گئی۔

مزید :

کورونا وائرس -