ورلڈکپ 2011ءکا فائنل فکسڈ ہونے کا الزام، سری لنکا نے سب سے بڑا اعلان کر دیا

ورلڈکپ 2011ءکا فائنل فکسڈ ہونے کا الزام، سری لنکا نے سب سے بڑا اعلان کر دیا
ورلڈکپ 2011ءکا فائنل فکسڈ ہونے کا الزام، سری لنکا نے سب سے بڑا اعلان کر دیا

  

کولمبو (ڈیلی پاکستان آن لائن) سری لنکا نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) ورلڈکپ 2011ءمیں بھارت کے خلاف میچ فکسڈ ہونے کے الزامات پر اعلیٰ سطحی تحقیقات کرانے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزرات کھیل کے سیکرٹری کی جانب سے معاملے کی مکمل چھان بین کی انکوائری کے احکامات جاری کر دیئے گئے ہیں، اس وقت ٹیم مینجمنٹ کا حصہ سٹاف کے بیانات بھی ریکارڈ کئے جائیں گے اورسابق وزیر کھیل سے پوچھ گچھ کرکے ان سے مزید تفصیلات حاصل کی جائیں گی۔

سابق وزیر کھیل ہیرن فرنینڈو نے بھی ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کھیلوں میں غلط کام کرنے والوں کو سزا دینے کیلئے گزشتہ سال پارلیمنٹ میں ایک نیا ایکٹ منظور کیا گیا ہے جس کے تحت ذمہ داروں کے خلاف ایکشن لیاجاسکتا ہے۔

واضح رہے کہ سری لنکا کے سابق وزیر کھیل مہندانند الوتھگا ماگے نے چونکا دینے والا انکشاف کرتے ہوئے کہا تھا کہ آئی سی سی ورلڈ کپ 2011 کا فائنل فکسڈ تھا۔ 2010 سے 2015ءتک سری لنکا کے وزیر کھیل رہنے والے الوتھگا ماگے اس وقت وزیر بجلی و توانائی ہیں جنہوں نے کہا کہ ابھی میں اس میچ کے ’پلاٹ‘ سے متعلق انکشاف نہیں کرنا چاہتا۔ 2011ءمیں ہم جیت رہے تھے لیکن پھر ہم نے میچ فروخت کر دیا اور میں محسوس کرتا ہوں کہ اب اس بارے میں بات کر سکتا ہوں ، میں کھلاڑیوں پر الزامات عائد نہیں کر رہا لیکن کچھ شعبے اس میں ملوث تھے۔

انہوں نے کہا کہ میں اس وقت ہر بات نہیں بتا سکتا لیکن ایک دن ضرور بتاﺅں گا، ہمیں اس بات کی تحقیقات ضرور کرنی چاہئیں کہ 2011ءورلڈکپ کے فائنل میچ میں سری لنکن ٹیم کو کیا ہوا تھا۔ کرکٹ کرپشن کے واقعات نے پہلے ہی سری لنکن کرکٹ کے درودیوار ہلا کر رکھ دئیے ہیں اور اب سابق وزیر کھیل کے اس بیان نے جلتی پر تیل کا کام کیا ہے جبکہ آئی سی سی بھی مختلف پہلوو¿ں سے سارے معاملے پر تحقیقات کررہی ہے۔

مزید :

کھیل -