بھارتی فوج کو اب کیا کرنا چاہیے؟ چینی فوج نے بہترین مشورہ دے دیا

بھارتی فوج کو اب کیا کرنا چاہیے؟ چینی فوج نے بہترین مشورہ دے دیا
بھارتی فوج کو اب کیا کرنا چاہیے؟ چینی فوج نے بہترین مشورہ دے دیا

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) تبت کے علاقے میں ایل اے سی (لائن آف ایکچوئل کنٹرول)پر گزشتہ پیر کی شب چینی اور بھارتی فوج کے درمیان ڈنڈوں اور پتھروں کے ساتھ ایک جھڑپ ہوئی جس میں ایک کرنل سمیت20بھارتی فوجی ہلاک ہو گئے۔ اس واقعے کے بعد اب چینی فوج نے بھارتی فوج کو مفید مشورہ دے دیا ہے کہ اب اسے کیا کرنا چاہیے۔ ویب سائٹ people.cn کے مطابق چینی فوج کے ایک ترجمان نے گزشتہ روز ایک بیان میں کہا ہے کہ بھارتی فوج کو اب درست راستے پر واپس آ جانا چاہیے جو کہ ڈائیلاگ اور مذاکرات کا راستہ ہے۔ اسے اب اپنے فرنٹ لائن پر موجود فوجیوں کو سختی سے معاہدوں کا پابند بنانا چاہیے تاکہ آئندہ ایسا واقعہ رونما نہ ہو۔

چینی فوج کی ویسٹرن تھیٹر کمانڈ کے ترجمان ژینگ شوئیلی نامی ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارتی فوجیوں نے اپنے وعدوں اور معاہدوں کی خلاف ورزی کی اور غیرقانونی سرگرمیوں کے لیے ایک بار پھر ایل اے سی عبور کرکے چینی علاقے میں آگئے تھے۔ اپنے اس اقدام کے ذریعے انہوں نے جان بوجھ کر چینی فورسز کو اشتعال دلایا، جس کے نتیجے میں یہ جھڑپ ہوئی اور اموات ہوئیں۔ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ بھارتی فوج اپنے فرنٹ لائن پر موجود فوجیوں کو قابو میں رکھے اور مذاکرات کی طرف واپس آئے کیونکہ یہی درست راستہ ہے۔“

مزید :

بین الاقوامی -