سچن ٹنڈولکر کی کئی یادگار اشیاءسٹیڈیم سے غائب ہو گئیں، بھارت سے حیران کن خبر آ گئی

سچن ٹنڈولکر کی کئی یادگار اشیاءسٹیڈیم سے غائب ہو گئیں، بھارت سے حیران کن خبر ...
سچن ٹنڈولکر کی کئی یادگار اشیاءسٹیڈیم سے غائب ہو گئیں، بھارت سے حیران کن خبر آ گئی

  

کیرالہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق ماسٹر بلاسٹر سچن ٹنڈولکر کی کئی یادگار اشیاءنہرو سٹیڈیم کوچی سے غائب ہو گئی ہیں جبکہ پویلین کی حالت بھی انتہائی خراب ہو گئی ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست کیرالہ کے شہر کوچی میں واقع جواہر لعل نہرو انٹرنیشنل سٹیڈیم میں انتظامیہ کی غفلت کے باعث ناصرف سچن ٹنڈولکر پویلین کی حالت انتہائی خراب ہو گئی ہے بلکہ ان کی کئی یادگار اشیاءبھی سٹیڈیم سے غائب ہوگئی ہیں۔ سچن ٹندولکر پویلین کا افتتاح 20 نومبر 2013ءکو بھارتی کرکٹ ٹیم کے اس وقت کے کپتان مہندرا سنگھ دھونی نے کیا تھا جبکہ ٹنڈولکر نے اس پویلین کو اپنی جرسی، دستخط شدہ بیٹ اور اپنی استعمال شدہ گیند تحفے میں دی تھی۔

تاہم جس شور شرابے کے ساتھ کیرالہ کرکٹ ایسوسی ایشن اور گریٹر کوچی ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے مل کر سچن ٹنڈولکر پویلین قائم کیا تھا اب اس کی حالت بے حد خراب ہے، حتیٰ کہ یادگار اشیاءکا بھی کچھ معلوم نہیں ہے۔ بھارتی کرکٹ بورڈ کے جوائنٹ سیکرٹری جایش جارج نے بھی سٹیڈیم میں ٹنڈولکر پویلین کی بری حالت پر حیرت کا اظہار کیا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ اس پویلین کی صورت حال تب سے تبدیل ہوئی ہے جب سے مقامی انڈین سپر لیگ کی ٹیم کوچی بلاسٹرز نے سٹیڈیم کو اپنا ہوم وینیو بنا لیا ہے۔

واضح رہے کہ سچن ٹنڈولکر پویلین کیرالہ کرکٹ ایسوسی ایشن اور گریٹر کوچی ڈیولپمنٹ اتھارٹی کا مشترکہ اقدام تھا، یہ پویلین 1 ہزار مربع فٹ پر پھیلا ہوا ہے اور اس میں سچن ٹنڈولکر کی متعدد تصاویر بھی ہیں جن میں ماسٹر بلے باز کے ساتھ سرڈان بریڈ مین اور ویسٹ انڈیز کے سابق کپتان برائن لارا کی تصاویر بھی شامل ہیں جبکہ پویلین میں سچن کے بچپن کی تصاویر بھی لگی ہوئی ہیں۔

سال 2014ءمیں آئی ایس ایل کے آغاز کے بعد نہرو سٹیڈیم نے کسی بھی بین الاقوامی کرکٹ میچ کی میزبانی نہیں کی ہے، گراؤنڈ میں آخری بین الاقوامی کرکٹ میچ 8 اکتوبر 2014 کو بھارت اور ویسٹ انڈیز کے مابین کھیلا گیا تھا۔

مزید :

کھیل -