”پاکستان میں ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کی بحالی لازمی ہے کیونکہ۔۔۔“ قومی ہاکی ٹیم کے ہیڈ کوچ بھی پھٹ پڑے

”پاکستان میں ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کی بحالی لازمی ہے کیونکہ۔۔۔“ قومی ہاکی ٹیم ...
”پاکستان میں ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کی بحالی لازمی ہے کیونکہ۔۔۔“ قومی ہاکی ٹیم کے ہیڈ کوچ بھی پھٹ پڑے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان ہاکی ٹیم کے ہیڈ کوچ خواجہ جنید نے کہا ہے کہ ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کی بحالی لازمی ہے جبکہ پاکستان ہاکی کا یورپی ممالک کے سسٹم سے موازنہ نہیں کیا جاسکتا۔

تفصیلات کے مطابق ہیڈ کوچ پاکستان ہاکی ٹیم خواجہ جنید نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ35 کھلاڑیوں کی فہرست بناچکے ہیں اور 300 کھلاڑی اب تک پول میں شامل کرچکے لیکن پاکستان ہاکی فیڈریشن (پی ایچ ایف) ان سب کھلاڑیوں کوسنبھال نہیں سکتی۔

انہوں نے کہا کہ ہم یورپی ممالک کے سسٹم سے موازنہ نہیں کرسکتے ہیں جبکہ ملک میں ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کی بحالی لازمی ہے، بھارت میں 40 کے قریب ڈیپارٹمنٹس کھیلوں سے جڑے ہیں جبکہ ہاکی کلبز چلانے کیلئے فنڈزکی ضرورت ہے مگر یہاں تو پاکستان ہاکی ٹیم کوچلانے کیلئے پیسے نہیں ہیں۔

ہیڈ کوچ کا کہنا تھا کہ بھارتی ہاکی فیڈریشن کا بجٹ بلین سے زائد ہے، وہ ہاکی لیگ کراتے ہوئے کھلاڑیوں کو مالی طور پر مضبوط کررہے ہیں، موجودہ دور میں بھارتی ہاکی ہم سے آگے نکل چکی ہے اور اگر ہم نے ہاکی کے کھیل کی طرف توجہ نہ دی تو یہ مزید پستی کا شکار ہو گا۔

مزید :

کھیل -