”تھوک سے گیند چمکانے پر پابندی کوئی مسئلہ نہیں، یہ کپڑا استعمال کریں اور۔۔۔“ مشہور کمپنی نے پریشان باﺅلرز کو انوکھا حل بتا دیا

”تھوک سے گیند چمکانے پر پابندی کوئی مسئلہ نہیں، یہ کپڑا استعمال کریں ...
”تھوک سے گیند چمکانے پر پابندی کوئی مسئلہ نہیں، یہ کپڑا استعمال کریں اور۔۔۔“ مشہور کمپنی نے پریشان باﺅلرز کو انوکھا حل بتا دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) کورونا وائرس کے باعث کرکٹ میں تھوک سے گیند چمکانے پر پابندی کے بعد باؤلرز اور ٹیمیں کافی پریشان ہیں لیکن گیند بنانے والی کمپنی ”ڈیوک“ نے اس کا انوکھا حل بتا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کرکٹ میں عموماً باؤلرز گیند خصوصاً پرانی گیند کی ایک سائیڈ کو چمکانے کیلئے تھوک اور پسینے کا استعمال کرتے ہیں تاکہ گیند کو سوئنگ کیا جا سکے لیکن انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے کورونا وائرس کی وجہ سے کھیل میں نئے ضوابط متعارف کراتے ہوئے تھوک کے استعمال پر پابندی عائد کردی ہے البتہ انہیں پسینے کے استعمال کی اجازت ہو گی۔

دنیا بھر کی کرکٹ ٹیمیں خصوصاً باؤلرز پریشان ہیں کہ وہ اس پابندی کے سبب گیند پرانی ہونے کے بعد اسے سوئنگ کیسے کریں گے جبکہ کچھ ماہرین نے خبردار کیا کہ پہلے سے بلے بازوں کیلئے موافق کھیل کی یہ نئی شرائط کھیل کا رہا سہا توازن بھی بگاڑ کر رکھ دیں گی لیکن اب گیند بنانے والی کمپنی نے باؤلرز کو اس کا حل پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ گیند کو چمکانے کیلئے ’تولئے‘ کے کپڑے کا استعمال کریں۔

انگلینڈ میں ٹیسٹ میچ میں استعمال کی جانے والی ڈیوک بال بنانے والی کمپنی برٹش کرکٹ بال لمیٹڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر دلیپ ججودیا نے کہا کہ ٹیموں کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اولین بات تو یہ کہ گیند کو اس کی اصل شکل میں ہونا چاہیے، آپ چاہے پسینہ استعمال کریں، تھوک یا پھر کچھ اور لیکن ان سب چیزوں سے معمولی مدد ملتی ہے۔

دلیپ ججودیا نے کہا کہ ہم ہاتھ سے سلائی کر کے ایک باقاعدہ گیند تیار کرتے ہیں اور اسے اس طرح ڈیزائن کیا گیا ہے کہ جب تک آپ میں گیند سوئنگ کرنے کا ہنر موجود ہے، یہ گیند سوئنگ ہو گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب کوئی کھلاڑی ڈیوک گیند کو کپڑے سے بے تحاشا رگڑتا ہے تو اس سے اس پر موجود ویکس اتر کر لیدر میں چلا جاتا ہے جس سے گیند چمک جاتی ہے۔

انہوں نے انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کے درمیان ہونے والی سیریز میں کھلاڑیوں کو مشورہ دیا کہ وہ اپنے پاس ’تولئے‘ والا کپڑا رکھیں جیسا کہ سابق عظیم ویسٹ انڈین فاسٹ باؤلر میلکم مارشل کرتے تھے اور وہ اپنی کمر کیساتھ ہمیشہ تولئے کا چھوٹا کپڑا لٹکائے رکھتے تھے۔

اس موقع پر انہوں نے انگلش کپتان جو روٹ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ روٹ اپنی پولیسٹر کی شرٹ سے گیند کو ہر وقت چمکاتے رہتے ہیں لیکن اس سے کچھ نہیں ہونا، یہ وقت کا ضیاع ہے۔ انہوں نے باؤلرز کو مشورہ دیا کہ آپ گیند تولئے کے کپڑے سے چمکائیں، صرف پسینے اور تولئے کا استعمال کریں، یہی بہترین رہے گا۔

مزید :

کھیل -