پرائیویٹ  میڈیکل کالجز  کی تنظیم  ’پامی‘  نے  پی ایم سی کے بائیکاٹ کا اعلان  کردیا

پرائیویٹ  میڈیکل کالجز  کی تنظیم  ’پامی‘  نے  پی ایم سی کے بائیکاٹ کا اعلان ...
پرائیویٹ  میڈیکل کالجز  کی تنظیم  ’پامی‘  نے  پی ایم سی کے بائیکاٹ کا اعلان  کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پرائیویٹ میڈیکل کالجز کی تنظیم پاکستان ایسوسی ایشن آف پرائیویٹ میڈیکل اینڈڈینٹل انسٹی ٹیوشنز (پامی) کی  جنرل کونسل  نے  پی ایم سی کے بائیکاٹ کا اعلان  کردیا،ایڈمیشن ریگولیشن 2021ء کو معطل کرنے کا مطالبہ،مطالبات منظور نہ ہوئےتو پرائیویٹ میڈیکل کالجز کی تالہ بندی کا اشارہ دے دیا، پامی کے صدر پروفیسر ڈاکٹر  چوہدری عبدالرحمٰن  نے کہا ہے کہ  پی ایم سی ،ناتجربہ کار لوگوں کے حوالے کردی گئی ہے ،  غلط پالیسیاں  میڈیکل ایجوکیشن کو تباہ کر رہی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پاکستان ایسوسی ایشن آف پرائیویٹ میڈیکل اینڈڈینٹل انسٹی ٹیوشنز کے صدر پروفیسر ڈاکٹر چوہدری عبدالرحمٰن کی زیر صدارت  جنرل کونسل کا   ہنگامی اجلاس  ہوا،جس میں اسلام آباد ، خٰبر پختونخوا، سندھ ، بلوچستان اور پنجاب میں موجود صوبائی چیپٹرز کی طرف سے بھیجی جانے والی سفارشات کا جائزہ لیا گیا اور پی ایم سی کی جانب سے ’ایڈمیشن ریگولیشن2021ء‘ میں درج غیر قانونی اقدامات کی مذمت کی گئی اور تمام ممبران کی منظوری کے ساتھ پی ایم سی کے غیر قانونی اقدامات کے خلاف آئندہ کے لائحہ عمل کی منظوری دی گئی ۔

اجلاس میں اس بات کا جائزہ لیا گیا کہ کس طرح ایک وکیل (علی رضا، نائب صدر پی ایم سی )سمیت دیگر غیر متعلقہ افراد کو لامحدود اختیارات کے ساتھ شعبہ طب پر مسلط کردیا گیاجبکہ انہی افراد نے پچھلے سال ملک کے تمام ڈینٹل کالجز جن میں خصوصی طور پر سندھ کے ڈینٹل کالجز ہیں کو تباہی کے دہانے پر لاکھڑا کیا اوراس سال ایڈمیشن ریگولیشن 2021ءکے ذریعے کے پی کے اور جنوبی پنجاب کے میڈیکل و ڈینٹل کالجز ان کے نشانے پر ہیں۔ 

اجلاس میں پی ایم سی اقدامات کی مذمت اور بائیکاٹ کا اعلان اور ایڈمیشن ریگولیشن 2021ء کو معطل کرنے کا مطالبہ  کیا گیا۔’پامی‘  نےپی ایم سی کے’این ایل ای‘ امتحان کو بھی مسترد کرتےہوئےکہا کہ مطالبات پورے نہ ہوئے تو پرائیویٹ کالجز داخلے نہیں کریں گے۔اجلاس میں منظوری دی گئی کہ 22جون بروز منگل کو دوپہر ایک بجے پریس کانفرنس کرکےوائٹ پیپر جاری کیاجائےگااور ساتھ ہی میڈیکل و ڈینٹل کالجز کی اس تباہی کو روکنے کے لیے آئندہ کی حکمت عملی سے بھی آگاہ کیا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -