کامن ویلتھ گیمز، ایبٹ آباد میں کیمپ

کامن ویلتھ گیمز، ایبٹ آباد میں کیمپ

  

پاکستان ہاکی فیڈریشن نے بر منگھم کامن ویلتھ گیمز کی تیاریوں کے سلسلے میں ایبٹ آباد میں 36 کھلاڑیوں پر مشتمل فزیکل فٹنس کیمپ جاری ہے۔جو دو ہفتے جاری رہے گا۔تمام کھلاڑیوں کو  کیمپ کمانڈنٹ اولمپیئن خواجہ جنید کو رپورٹ کرنے کی ہدایت جاری کی گئی تھی۔کیمپ آفیشلز میں ٹیم منیجر خواجہ جنید،ہیڈ کوچ سیگفرائیڈ ایکمین،فزیکل ٹرینر ڈینیئل بیری،ویڈیو انالسٹ ندیم لودھی،فزیوتھراپسٹ عدیل اختر ہونگے جبکہ کھلاڑیوں میں عبداللہ اشتیاق خان گول کیپر، اکمل حسین گول کیپر، وقار گول کیپر، منیب الرحمن گول کیپر،مبشر علی،عماد شکیل بٹ،محمد عبداللہ،محمد حماد انجم،رضوان علی،عبدالمنان،عمر بھٹہ،رانا عبدالوحید اشرف،غضنفر علی, محمد سلمان رزاق،رومان خان،معین شکیل، جنید منظور،اعجاز احمد،عبدالحنان شاہد،افراز،ارباز احمد, احمد ندیم،احتشام اسلم، حسان امین، عقیل احمد، تعظیم الحسن، عبدالرحمن، مرتضی یعقوب،ارشد لیاقت، ابوزر،ایم شاہذیب خان،نوہیز زاہد ملک،رانا سہیل ریاض،اظفر یعقوب،محمد سفیان،عمیر ستارشامل ہیں۔جبکہ دوسری جانب پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سکریٹری جنرل آصف باجوہ نے کہا ہے کہ ایشیا کپ ہاکی ٹور نامنٹ میں 12ویں کھلاڑی کی میدان میں موجودگی میں جو بھی قصور پایا اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی، انہوں نے کہا کہ منیجر کی ذمے داری ہوتی ہے، تاہم اگر ہیڈ کوچ یا کھلاڑی ملوث پائے گئے تو ان کے خلاف بھی ایکشن ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ورلڈ کپ سے باہر ہونا افسوس ناک ہے، اس کے لئے ہم نے بھر پور تیاری کی تھی مگر ایک غلطی سے فیڈریشن کی ساری محنت اور اقدامات ضائع ہوگئے،انہوں نے کہا کہ انکوائری کمیٹی نیک نامی رکھنے والوں پر مشتمل ہے، وہ ہمیں ہاکی میں بہتری کے لئے سفارشات بھی دیں گے، پاکستان ہاکی ٹیم کے کپتان عمر بھٹہ نے وطن واپسی پربات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جاپان کے خلاف12 کھلاڑیوں کی موجودگی غلط فہمی کا نتیجہ تھا یہ جان بوجھ کر نہیں کیا گیا۔ اس غلطی کی وجہ سے ہمارا گول مسترد ہوا، اس عمل سے ہم ایشیا کپ کے وکٹری اسٹینڈ اور ورلڈ کپ سے باہر ہوگئے، میں قوم سے معافی مانگتا ہوں، انہوں نے کہا کہ 12کھلاڑیوں کی گراؤنڈ میں موجودگی کے ذمے دار میچ کے ٹیکنکل آفیشلز بھی ہیں جنہوں نے میچ کو نہیں روکا اور اسے پوائنٹ آوٹ نہیں کیا، ہماری ٹیم انتظامیہ سے بھی غلطی ہوئی، بطور کپتان میں نے بھی اس پر توجہ نہیں دی،انہوں نے کہا کہ کھلاڑیوں کی تبدیلی کے حوالے سے پہلے میچ سے پہلے ہی ڈک آوٹ میں منٹ اور نام کے ساتھ فہرست آویزاں کردی جاتی ہے اور کھلاڑیوں کو بھی بریفننگ دی جاتی ہے، مگر ہمارے کھلاڑی اس پر عمل نہیں کر سکے، انہوں نے کہا کہ ایشیا کپ میں ہماری کار کردگی بہتر رہی، بھارت کے ساتھ میچ برابر کھیلا، جاپان کے ساتھ دو گول مسترد ہوئے ورنہ ہم میچ جیت جاتے، ہماری ٹیم تشکیل کے مراحل میں ہیں۔ 

مزید :

ایڈیشن 1 -