نوشہرہ‘ غریب مزدور غلط انجکشن لگنے سے جاں بحق‘ لواحقین کا احتجاج

  نوشہرہ‘ غریب مزدور غلط انجکشن لگنے سے جاں بحق‘ لواحقین کا احتجاج

  

نوشہرہ (بیورو رپورٹ) نوشہرہ کے علاقے نظام پور گاوں کاہی میں عطائی ڈاکڑ کی غلط انجکشن لگانے پرغریب مزدور کار جاں بحق واقعہ پر پورا گاوں سراپا احتجاج بن کر نوشہرہ مردان روڈ کو بند کردیا۔محکمہ صحت نوشہرہ نے واقعہ کا سحت نوٹس لیتے ہوئے اعلی سطح انکوائری شروع کردی۔ ذرائع کے مطابق گذشتہ رات نظام پور کے گاوں کاہی کے 38 سالہ غریب محنت کش گل زمان اپنی بیوی کے ہمراہ گاوں میں سعید نامی عطائی ڈاکڑ کے پاس گئے جہاں پر سعید نے انکو درد کا ایک انجکشن لگایا۔ انجکشن لگتے ہی گل زمان کی حالت خراب ہونے لگی جسکو فوری طور نوشہرہ قاضی حسین احمد میڈیکل کمپلیکس لے جایاگیا جہاں پر ڈاکڑوں نے انکی موت کی تصدیق کردی موت کا سنتے ہی عطائی ڈاکڑ موقع سے فرار ہوگئے۔گل زمان کے بھائی  رات کولاش اپنے گاوں لے گئے جہاں واقعہ کی خبر جنگل آگ کی طرح پھیل گئی۔ گاوں کے لوگوں نے لاش پوسٹ مارٹم کے لئے دوبارہ قاضی حسین احمد میڈیکل کمپلیکس لائے تاہم ہسپتال میں محصوص قسم کی پوسٹ مارٹم کی عدم دستیابی کی وجہ سے گل زمان کے ورثاء اور گاوں کے لوگ سراپا احتجاج بن کر نوشہرہ مردان روڈ کو احتجاجا  بند کردیا۔۔ تاہم اس دوران ہسپتال اور ضلعی انتظامیہ موقع پر پہنچ کر ان سے مذاکرات کئے اور ہسپتال انتظامیہ نے پوسٹ مارٹم کی حامی بھری۔ جس پر ورثاء نے احتجاج ختم کردیا۔ محکمہ صحت اور ڈی ایچ او ڈاکڑ شعیب نے واقع پر اعلیٰ سطح تحقیقات کا حکم دے کر تحقیقات شروع کردی 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -