بجلی بچت پلان،پنجاب میں مارکیٹیں رات 9بجے بندکرنے کا فیصلہ

  بجلی بچت پلان،پنجاب میں مارکیٹیں رات 9بجے بندکرنے کا فیصلہ

  

    لاہور (جنرل رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) بجلی بچت پلان پر عملدرآمد کیلئے صوبہ سندھ کے بعد اب پنجاب حکومت نے بھی مارکیٹیں رات 9 بجے بند کرنے کا فیصلہ کرلیا جس کا جلد نوٹیفکیشن جاری کیا جائیگا۔ وزیراعلی پنجاب حمزہ شہباز نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے صوبے میں بجلی بچت پلان پر کل بروز پیر 20 جون سے عملدرآمد کرنے کی منظوری دیدی،ذرائع کے مطابق پیر سے صوبے کے بڑے شہروں کے بازار، مارکیٹیں صبح 8 بجے سے رات 9 بجے تک کھلیں گی، وزیراعلی حمزہ شہباز نے یہ فیصلہ تاجر رہنماؤں سے مشاور ت کے بعد کیا،جس کے تحت  پہلے مرحلے میں لاہور سمیت بڑے شہروں میں عملدرآمد شروع ہوگا۔ وزیراعلی آفس لاہور سمیت بڑے شہروں میں سوموار سے رات 9 بجے بازار بند ہو جائینگے، صرف فارمیسی، بیکری، پٹرو ل پمپس اور دودھ کی دکانوں کو استثنیٰ حاصل ہو گا، لاہور کی 63 مارکیٹیں رات 9 بجے بند ہونگی۔ پہلے مرحلے میں یہ پابندی دو ماہ کیلئے ہوگی۔ وزیر اعلی پنجاب حمزہ شہباز نے کہا پنجاب بھر میں ریسٹورنٹس رات ساڑھے11بجے تک کھلے رہیں گے۔شادی ہالز سابق پالیسی کے تحت رات 10 بجے تک کھل سکیں گے جبکہ ہفتے کو تاجر برادری کو کاروبار کے اوقات میں خصوصی رعایت دی جائیگی۔عید کی شاپنگ کیلئے اوقات کار کی پالیسی کا تاجر برادری سے مشاورت سے جائزہ لیا جائیگا اور ان کے مطالبے پر ہمدردانہ غور کیا جائیگا۔وزیر اعلی حمزہ شہباز سے صوبہ بھر کے تاجر رہنماؤں اورنمائندوں نے گزشتہ روز ملاقات کی اور توانائی بحران میں حکومتی اقدامات کی بھرپور حمایت کا اعلان کرنے سمیت انرجی سیونگ کیلئے حکومتی اقدامات کو سراہا۔وزیراعلیٰ نے کہا معیشت کی بہتری کیلئے تاجر برادری کا کلیدی کردار ہے،ان کے جائز مسائل حل کرینگے۔ تاجر برادری کے عہدیداروں نے اپنے خیالات کا اظہار کیا اور تجاویز بھی پیش کیں۔صدر لاہور چیمبر نعمان کبیر نے کہا ہے کہ قومی مفاد کے فیصلوں پر ساتھ ہیں، بچت پلان پر عمل سے بجلی اور پیٹرول کی بچت ہوگی، اس وقت پٹرول اور بجلی بچانا قومی فریضہ ہے، عوام کم سے کم بجلی استعمال کریں۔دوسری جانب صوبائی دارالحکومت میں 63 کمرشل مارکیٹس بند کرنے کی فہرست بنائی گئی ہے، لاہور میں کمرشل مارکیٹس میں رات 9 بجے کے بعد کمرشل فیڈرز پر 361 میگا واٹ استعمال ہو رہے ہیں۔ذرائع لیسکو کی جانب سے پیک آورز میں کمرشل فیڈرز بند کرنے کی بات چل رہی ہے، وفاق کے بعد لاہور سمیت پنجاب بھر میں کمرشل فیڈرز بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، لاہور میں رات 9 بجے کے بعد مجموعی طور پر 63 مارکیٹس کو بند کیا جائے گا۔بند ہونے والی مارکیٹس میں ماڈل ٹاؤن لنک روڈ، میٹرو کیش اینڈ کیری، صدیق ٹریڈ سنٹر، سٹی ٹاور گلبرگ،کلمہ ٹاور گلبرگ،،پیس مال گلبرگ اور پارک لین بند ہو گی جبکہ فورٹریس سٹیڈیم، لبرٹی مارکیٹ، حفیظ سنٹر، گلشن راوی، انار کلی بھی فہرست میں شامل ہیں۔ایم ایم مالم روڈ،جوہر ٹاؤن، شادمان، کریم مارکیٹ سمیت دیگر مارکیٹس میں بجلی بند ہو گی۔

مارکیٹ،بازاربند

مزید :

صفحہ اول -