فوجیوں کیلئے کیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس،نان فائلر کیلئے گاڑی کی رجسٹریشن سو فیصد بڑھانیکی تجویز منظور

فوجیوں کیلئے کیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس،نان فائلر کیلئے گاڑی کی رجسٹریشن سو ...

  

        اسلام آباد(آئی این پی)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے ریٹائرڈ اورحاضر سروس آرمی ملازمین کیلئے پراپرٹی پر کیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لینے اور نان فائلر پر گاڑیوں کی رجسٹریشن کا ٹیکس 100 فیصد بڑھانے کی تجویز منظور کرلی، کمیٹی نے فلائنگ الاؤنس کو تنخواہ میں ضم کرکے ٹیکس لگانے کی مخالفت کردی۔ ایف بی آر حکام نے کمیٹی کوبتایاکہ پاکستانیوں کو دبئی لندن یا نیویارک کی ڈکلیئرڈ پراپرٹی کی قیمت پر ایک فیصد کیپٹل ویلیو ٹیکس ادا کرنا ہو گا،آئی پی پیز کی طرف سے کوئلہ کی درآمد پر ڈیوٹی دو فیصد سے کم کر کے ایک فیصد کر دی گئی تاکہ بجلی کاٹیرف کم ہوسکے۔کمیٹی پیرکووزیرخزانہ کے ساتھ ملکر بجٹ سفارشات کوحتمی شکل دے گی اور منگل کوبجٹ سفارشات سینیٹ میں پیش کی جائیں گئیں۔ہفتہ کوسینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ، محصولات و اقتصادی امور کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر سلیم مانڈویوالا کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔قائمہ کمیٹی خزانہ نے فنانس بل 2022 میں انکم ٹیکس، سیلز ٹیکس اور کسٹم ٹیکس کے حوالے سے متعلقہ اداروں کی تجاویز کا تفصیلی جائزہ لیا۔ قائمہ کمیٹی نے  ہفتہ کو منعقدہ  اجلاس میں اسلام آباد کیپٹل ٹیرٹری آرڈنینس سے متعلقہ تجاویز کا جائزہ بھی مکمل کر لیا۔ چیئرمین کمیٹی سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ قائمہ کمیٹی نے فنانس بل میں تمام تجاویز کا تفصیلی جائزہ لیا ہے۔ قائمہ کمیٹی کے سوموار کو منعقد ہونے والے اجلاس میں وزیر خزانہ کے ساتھ مل کر تمام تجاویز کو حتمی شکل دی جائے گی اور منگل کے روز منعقد ہونے والے ایوان بالاء کے اجلاس میں کمیٹی کی رپورٹ پیش کر دی جائے گی۔ ایف بی آرحکام نے کمیٹی کوبتایاکہ ریٹائرڈ اورحاضر سروس آرمی ملازمین کیلئے پراپرٹی پر کیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لی جارہی ہے،اس کے ساتھ حکومتی ملازمین کیلئے بھی پراپرٹی پر کیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لی جارہی ہے،کمیٹی نے ایف بی آر کی تجویز منظور کرلی۔ چیئرمین کمیٹی نے ایف بی آر حکام کوہدایت کی کہ جو بھی قانون سازی ہو اس کو بل کی شکل میں لایا جائے،آرڈیننس کے ذریعے قانون سازی نہ کی جائے۔ایف بی آر نے کہاکہ پائلٹ کیلئے فلائنگ الاؤنس کو بھی اس کی تنخواہ میں شامل کیا گیا ہے، پہلے فلائنگ الاؤنس  پر 7.5 فیصد ٹیکس تھا،چیئرمین کمیٹی  نے کہاکہ فلائنگ الاؤنس پر ٹیکس لگانا درست عمل نہیں ہے تنخواہ پر ٹیکس لیا جارہا ہے،کمیٹی کی فلائنگ الاؤنس کو تنخواہ میں ضم کرکے ٹیکس لگانے کی مخالفت کردی۔ چیئرمین ایف بی آر نے کہاکہ پاکستان فارما سوٹیکل مینو فیکچررز ایسوسی ایشن کے ریفنڈز کا مسئلہ حل کرلیا گیا ہے،کل بھی اس پر تفصیلی بات چیت ہوئی ہے۔

خزانہ کمیٹی 

مزید :

صفحہ اول -