یونین کونسل 90،سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کاشکار صاف پانی نایاب ووٹر ز اراکین اسمبلی سے ناراض

یونین کونسل 90،سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کاشکار صاف پانی نایاب ووٹر ز اراکین اسمبلی سے ...
یونین کونسل 90،سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کاشکار صاف پانی نایاب ووٹر ز اراکین اسمبلی سے ناراض

  

لاہور (رانا جاوید/الیکشن سیل) یوسی 90شیراکوٹ میں کوڑا کرکٹ کے ڈھیر گلیوں میں جگہ جگہ پانی کھڑا ہے سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں منشیات کا دھندہ اپنے عروج پر ہے۔ پچھلے پانچ سال میں ہم نے اپنے ایم این اے کی شکل تک نہیں دیکھی آئندہ الیکشن میں کسی ایسے امیدوار کو ووٹ دیں گے جو ہمارے مسائل حل کروائے گا ”روزنامہ پاکستان“ کی طرف سے کئے گئے سروے میں اہل علاقہ کی رائے۔ تفصیلات کے مطابق یوسی 90شیراکوٹ کے رہائشی محمد ادریس نے کہا کہ ہمارے علاقے میں کوئی ترقیاتی کام نہیں ہوا۔ ہمارے ایم این اے کو اتنی توفیق نہیں ہوئی کہ وہ اپنا چہرہ ہی حلقے کے لوگوں کو دکھادیتے۔ ہم اپنی مدد آپ کے تحت سیوریج کے نظام کو ٹھیک کرواتے ہیں۔ محمد عارف نے کہا کہ ہمارے علاقے میں صفائی کرنے والا عملہ ہفتے میں صرف ایک مرتبہ آتا ہے گلیوں میں کوڑے کرکٹ کے ڈھیر پڑے ہوئے ہیں علاقے کی گلیاں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔ پنجاب حکومت دعویٰ کرتی ہے کہ ہم نے بدلا ہے پنجاب مگر ہمارے علاقے میں تو کوئی تبدیلی نہیں آئی۔ محمد یونس اور فیصل نے کہا شیراکوٹ کے علاقے میں منشیا ت فروشی کا دھندہ اپنے عروج پر ہے شراب اور چرس سرے عام بکتی ہے۔ شیراکوٹ کے نمائندے کبھی تشریف نہیں لائے ہم نے ان کی شکل تک نہیں دیکھی۔ علاقے میں صاف پانی نایاب ہے۔ گندا نالا علاقے سے گزرنے کی وجہ سے ہر وقت بدبو آتی ہے۔ لیاقت اور سعید نے کہا ہم تو راہیں تکتے رہتے ہیں کہ ہمارے ایم پی اے یا ایم این اے ہمارے علاقے میں بھی تشریف لائیں ان کے پاس جائیں تو وہ وعدوں پر ٹرخادیتے ہیں۔ ہم ووٹ اس کو دیں گے جو ہمارے علاقے کے مسائل کو حل کرے گا سیوریج کا نظام تباہ ہوچکا ہے۔ بجلی تو شاذونادر ہی آتی ہے گیس کی لوڈشیڈنگ نے رہی سہی کسر پوری کردی ہے۔ سمیر علی بٹ نے کہا ہمارے نمائندے صرف ووٹ لینے آتے ہیں خاص طور پر ہمارے ایم این اے میاں مرغوب نے ہمارے علاقے میں کوئی کام نہیں کروایا وہ صرف اپنے پسند کے علاقوں میں کام کروارہے ہیں۔ عبدالغفور نے کہا کہ کوڑا کرکٹ کی وجہ سے بیماریاںپھیلنے کا خدشہ ہے۔ آئندہ الیکشن میں ہم تبدیلی کے لئے ووٹ ڈالیں گے۔ پانی گلیوں میں نکلتا رہتا ہے ہمارے نمائندوں کو اس سے کوئی سروکار نہیں وہ تو صرف الیکشن کے قریب ہی اسی علاقے کا رخ کریں گے۔ ہمارے علاقے میں نشے کا کاروبار سرعام ہوتا ہے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے۔

مزید : الیکشن ۲۰۱۳