مسلم لیگ ق نے پارٹی رہنماﺅں کی پیپلز پارٹی میں شمولیت پر اتحاد توڑنے کی دھمکی دے دی

مسلم لیگ ق نے پارٹی رہنماﺅں کی پیپلز پارٹی میں شمولیت پر اتحاد توڑنے کی ...
مسلم لیگ ق نے پارٹی رہنماﺅں کی پیپلز پارٹی میں شمولیت پر اتحاد توڑنے کی دھمکی دے دی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ ق نے پارٹی رہنماﺅں کی پیپلز پارٹی میں شمولیت پر اتحاد توڑنے کی دھمکی دے دی ہے۔سیٹ ایڈجسٹمنٹ کیلئے مذاکرات میں چوہدری برادران نے بائیکاٹ کر دیا۔ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ق کے درمیان سیٹ ایڈجسٹمنٹ کیلئے آج گورنر ہاو¿س میں مذاکرات ہونا تھے جس میں دونوں جماعتوں کے درمیان ایڈجسٹمنٹ کے معاملات کو حتمی شکل دی جانا تھی۔ مذاکرات میں پیپلز پارٹی کی جانب سے قمر زمان کائرہ، منظور وٹو اور دیگر رہنما موجود تھے تاہم مذاکرات کیلئے چوہدری شجاعت اور پرویز الٰہی نے مذاکرات کا بائیکاٹ کرتے ہوئے سیکنڈ لیڈر شپ کو بھیج دیا۔ راجہ بشارت چوہدری ظہیر اور دیگر وفد نے پیپلز پارٹی سے بات چیت سے انکار کر دیا۔ ق لیگ کے رہنماو¿ں کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کا یہ اقدام اتحاد کے بنیادی اصولوں کے خلاف ہے۔

مزید : لاہور /اہم خبریں