پلاسٹک ، پرنٹنگ ، پیکنگ اور فوڈ ٹیکنالوجی کی نمائش شروع

پلاسٹک ، پرنٹنگ ، پیکنگ اور فوڈ ٹیکنالوجی کی نمائش شروع

کراچی(اکنامک رپورٹر ) پاکستان کی سب سے بڑی پلاسٹک ، پرنٹنگ ، پیکنگ اور فوڈ ٹیکنالوجی کی دسویں صنعتی نمائش 3پی پلاس پرنٹ پیک پاکستان کا آغاز منگل سے کراچی ایکسپو سینٹر میں شروع ہو ا ۔ فیکٹ ایگزیبیشنز پاکستان کے تحت ہونے والی اس تین روزہ نمائش میں دنیا بھر کے بیس ممالک سے دوسو سے زائد کمپنیاں شریک ہیں ۔ جس میں آسٹریلیا ، چین، بھارت، فرانس، جرمنی ، ایران، اٹلی، جاپان، کوریا، سوئٹزرلینڈ ،تائیوان، ترکی ، متحدہ عرب امارات، امریکا ،برطانیہ سمیت پاکستان کی مختلف کمپنیوںنے نمائش میں اپنے اسٹال لگائے ہوئے ہیں ۔یہ تمام کمپنیاںاپنی سیلز میں اور اضافے سمیت مقامی ایجنٹوں کے خدمات حاصل کرنے کے لئے اس شاندار پلیٹ فارم کو استعمال کر رہی ہیں ۔ عالمی پلاسٹک پرنٹنگ اینڈ پیکیجنگ پلاسٹک کی مصنوعات کے تیار کنندگان اور صارفین کو قریب لانے میں انتہائی اہم ثابت ہو گی ۔ افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فیکٹ ایگزیبیشنز کے سی ای او سلیم خان تنولی نے کہاکہ اس نمائش میں دنیا بھر سے غیر ملکی کمپنیوں کی شرکت یقینی طور پر پاکستانی مارکیٹ میںموجود مواقع تلاش کرنے میں بہت زیادہ اہم کردار ادا کرے گی ۔مختلف کمپنیوں کی جانب سے انجکشن مولڈنگ، ایکسٹروشن، بلو مولڈنگ اور روٹیشنل مولڈنگ، پلاسٹک پیکیجنگ مشینری اور فوڈ ٹیکنالوجی ، آلات اور خدمات نمائش میں آنے والے افراد کے سامنے پیش کر رہی ہیں ۔

عالمی سطح پر ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق عالمی پلاسٹک انڈسٹری 1950سے 9فی صد سالانہ کے حساب سے ترقی کر رہی ہیں ۔ صرف گذشتہ 30برسوںمیں عالمی پلاسٹک کی پیداوار میں 5سو فی صد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے ۔2007سے2015تک عالمی سطح پر پلاسٹک کے استعمال میں 5فی صد سالانہ استعمال میں اضافے کی پیش گوئی کی گئی ہے ۔اگرپیداور لحاظ سے بات کی جائے تو یہ 2015تک یہ مجموعی طور پر 330 ملین ٹن ہو جائے گی ۔ پہلے روز سرکاری حکام ، سفاتکاروں ، مقامی بزنس چیمبرز اور ٹریڈ ایسوسی ایشنز سمیت بڑی تعداد میں دیگر افراد بھی نمائش دیکھنے کے لئے آئے ۔نمائش میں فوڈ +ٹیکنالوجی پاکستان، انٹر نیشنل فوڈ ایکیوپمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی ایگزی بیشن شریک ہیں جو کہ تیار کنند گا ن اور ڈیلرز سے لے کر عام وزیٹر کے لئے زبردست موقع ہے ۔یہ نمائش 20مارچ تک جاری رہے گی ۔مشرقی خطے میں فی فرد استعمال ساڑھے کلو گرام جبکہ بھارت میں یہی استعمال 8کلو گرام اور عالمی سطح پر دیکھا جائے تو یہی استعمال 30کلو گرام فی فرد ہے ،مشرقی بھارت میں پلاسٹک پراسسنگ انڈسٹری کے لئے شاندار مواقع موجود ہیں ۔ابھرتی ہوئی معیشتوں کے جانب سے طلب میں اضافے سے اوسطاًسالانہ طلب میں بھی 5فیصد اضافے کا امکان ہے جبکہ خطے کے تیل پیدا کرنے والے ممالک بھی مارکیٹ کے بڑے حصے کے حصول کے لئے تیار ہیں ۔نمائش میں آنے والے افراد پلاسٹک خام مال ، پلاسٹک پیکیجنگ مشینری اینڈ ٹیکنالوجی ، ایکیوپمنٹ اینڈ سروسز، پرائمری پراسسنگ اایند آگزیلری ایکیوپمنٹس، ایکیوپمنٹس فار پری پراسسنگ ری سائیکلنگ ، پوسٹ پراسسنگ مشین، مشینری اور پلانٹ فار فنشنگ ، ڈیکوریٹنگ، پرنٹنگ، مارکنگ اور ذیلی ایکیوپمنٹ کا مشاہدہ کر سکتے ہیں ۔ا

مزید : کامرس