سعودی عرب میں سینکڑوں ادبی اور سیاسی کتب پر پابندی عائد

سعودی عرب میں سینکڑوں ادبی اور سیاسی کتب پر پابندی عائد

ریاض(آئی اےن پی ) سعودی حکام نے سینکڑوں ادبی اور سیاسی کتابوں پر پابندیاں عائد کردیں۔ مشہور فلسطینی شاعر محمود درویش کی کتابیں بھی پابندی کی نذر ہوگئیں۔اےک سعودی اخبار کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں سعودی حکومت کے لیے خطرہ تصور کی جانے والی کتابوں پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ سعودی پولیس نے کریک ڈاون کرتے ہوئے فلسطین کے معروف شاعر محمود درویش اور دیگر کی مصنفین کی سینکڑوں کتابوں پر پابندی عائد کردی ہے۔ اور ریاض میں ہونے والے عالمی کتب میلے میں نمائش کے دوران چار سو بیس کتابوں کی دس ہزار کاپیاں ضبط کرلی گئیں،،، پولیس نے عظیم عرب شاعر محمود درویش کی کتاب کے ان پیراگراف پر احتجاج کیا تھا، جو سعودی خیالات سے ہم آہنگ نہیں تھے۔ پولیس نے منتظمین کو حکم دیا کہ وہ ان کتابوں کو واپس کر دیں۔ سعودی میڈیا کے مطابق کتب میلے کی انتظامی کمیٹی نے عبداللہ العلمی کی کتاب وین ول سعودی وومن ول ڈرائیو اے کار، پر بھی پابندی لگادی ہے۔ دیگر جن کتابوں پر پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔ ان میں ہسٹری آف حجاب اور فیمن ازم ان اسلام بھی شامل ہے۔ گوگل کے سابق ایگزیکیوٹو اور ریگیولیشن کے مصنف وائل غنیم کی کتاب پر بھی پابندی لگادی گئی ہے، جنہوں نے دو ہزار گیارہ کی بغاوت میں سعودی اتحادی حسن مبارک کی حکومت کو گرانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

مزید : عالمی منظر