کینسر ایک قدیم مرض، 3200سال پرانا کینسر زدہ ڈھانچہ دریافت

کینسر ایک قدیم مرض، 3200سال پرانا کینسر زدہ ڈھانچہ دریافت
  • کینسر ایک قدیم مرض، 3200سال پرانا کینسر زدہ ڈھانچہ دریافت
  • کینسر ایک قدیم مرض، 3200سال پرانا کینسر زدہ ڈھانچہ دریافت
  • کینسر ایک قدیم مرض، 3200سال پرانا کینسر زدہ ڈھانچہ دریافت
  • کینسر ایک قدیم مرض، 3200سال پرانا کینسر زدہ ڈھانچہ دریافت

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) کہتے ہیں کینسر اور اس جیسے کئی امراض اس زمانے کی بیماریاں ہیں اور یہ آج کے دور کے رہن سہن کے باعث پیداہوئی ہیں لیکن شائد اب اس خیال پر نظر ثانی کرنی پڑے گی۔ ڈرہم یونیورسیٹی کے ماہرین آثار قدیمہ کو دریائے نیل کے کنارے سے 3200 سال پرانا انسانی ڈھانچہ ملا ہے جس کے بارے میں ماہرین کا دعویٰ ہے کہ یہ کسی کینسر کے شکارشخص کا ڈھانچہ ہے۔ ڈاکٹروں نے بھی اس 3200 سال پرانے انسان کا معا ئنہ کیا ہے اور ان کا کہنا ہے کہ اس کی ہڈیوں کی صورتحال دیکھ کر یہ نہیں بتایا جا سکتا کہ یہ جسم کے کس عضو میں تھا۔ مزید یہ کہ اس مرض کی وجہ ماحولیاتی آلودگی ، لکڑی کے جلنے کے باعث پیدا ہونے والے دھواں یا جنیاتی بھی ہو سکتی ہے۔ ماہرین کے مطابق اس دریافت سے موجودہ دور کی بیماریوں کی وجوہ سمجھنے میں مدد ملے گی۔ یہ بھی خیال ظاہر کیا گیا ہے کہ گزرے زمانے میں بھی بیماریاں اسی طرح موجود تھیں لیکن انسانوں کو ان کے بارے میں آگاہی نہیں تھی۔

مزید : تعلیم و صحت