دوران زچگی اموات سینٹرل پارک میڈیکل کالج نے ماں بچاﺅ مہم کا آغاز کر دیا

دوران زچگی اموات سینٹرل پارک میڈیکل کالج نے ماں بچاﺅ مہم کا آغاز کر دیا

                                                                           لاہور(رپورٹ میاںاشفاق انجم تصاویر ایوب شبیر) سنٹرل پارک میڈیکل کالج لاہور کے طلبہ طالبات نے ڈلیوری کے دوران بڑھتی ہوئی شرح اموات پر قابو پانے کے لئے ماں بچاﺅ مہم کا آغاز کر دیا 23مارچ کو سنٹرل پارک میڈیکل کالج فیروز پور روڈ میں فن فیئر کے انعقاد کا اعلان ، دیہاتی خواتین کو آگاہی مہم میں شامل کرنے کے لئے فوڈ سٹال، جھولے، آرمی بینڈ آتش بازی کے علاوہ موسیقی کے پروگرام کی تیاریوں کو آخری شکل دے دی گئی ۔ سنٹرل پارک میڈیکل کالج کی ہیلتھ فاﺅنڈیشن مستحق افراد کے لئے فری ڈلیوری / فری آپریشن کے ساتھ ساتھ ضلع قصور ضلع لاہور کے دیہات سے ڈلیوری کے لئے خواتین کو لانے کے لئے فری ٹرانسپورٹ کا بھی انتظام کرے گی ان خیالات کا اظہار سنٹرل پارک میڈیکل کالج کے فائنل ائیر کے طالبعلم ڈاکٹر زین العابدین فسٹ ایئر کی طالبہ ڈاکٹر انعم کاشف اور ڈاکٹر مشال ریاض نے روزنامہ پاکستان کے دورے کے دوران خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا ڈاکٹر زین العابدین نے کہا کہ وقت آ گیا ہے دائیوں سے نجات حاصل کرنی چاہیے اس کے لئے ضروری ہے آگاہی مہم چلائی جائے سنٹرل پارک میڈیکل کالج کے گرد و نواح میں سینکڑوں دیہات ایسے ہیں جہاں ڈلیوری کے دوران زیادہ اموات ہو رہی ہیں اور یہ سب جہالت کی وجہ سے ہو رہا ہے طلبہ طالبات نے چیئرمین میاں طاہر جاوید اور پرنسپل ڈاکٹر سہیل اختر چغتائی ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر یاسمین راشد کی قیادت میں ماں بچاﺅ مہم کا آغاز کردیا ہے ڈاکٹر مشال نے کہا کہ سنٹرل پارک میڈیکل کالج کے طلبہ طالبات پر عزم ہیں ہم ماﺅں کو مرنے نہیں دیں گے 23مارچ کو فوڈ کے سٹال لگیں گے جھولے لگائے جائیں گے خواتین بچوں سمیت آ سکیں گی 23مارچ کو آتش بازی کابڑا مقابلہ ہو گافنڈ ریزنگ بھی کریں گے اور اکٹھے ہونے والے پیسے کو قوم کی امانت سمجھ کر خرچ کیا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1