شکار پور میں جرگہ کی طرفسے خواتین کو قتل کرنے کا فیصلہ ظلم ہے،نیلم اشرف

شکار پور میں جرگہ کی طرفسے خواتین کو قتل کرنے کا فیصلہ ظلم ہے،نیلم اشرف

لاہور(سپیشل ر پورٹر ) تحریک انصاف وومن ونگ لاہور کی صدرنیلم اشرف نے کہا کہ سندھ شکار پور کی تحصیل لکی میں جرگہ نے دو خواتین کو کارو کاری کے الزام میں قتل کرنے کا حکم جاری کیا جبکہ دو لڑکوں کو پیسے دے کر چھوڑ دیا گیا ، نیلم اشرف نے کہا کہ سرمایہ دارانہ اور جاگیردارانہ نظام کی وجہ سے ایسے افسوسناک واقعات معاشرے میں رونما ہو رہے ہیں جس کی وجہ سے معاشرہ عدم تحفظ کا شکار ہو رہا ہے خواتین کے ساتھ ظلم و زیادتی اور تشدد کے واقعات معمول کا کام بن چکا ہے لیکن ہماری حکومتیں خواتین کے تحفظ کے لئے کچھ بھی نہیں کر رہیں اور جو بھی قوانین خواتین کے حوالے سے ہیں حکومتیں اور انتظامیہ اس پر عمل درآمد نہیں کرواتیں انہوں نے کہا کہ اس واقعہ نے گڈگورنس کی قلعی کھول کر رکھ دی ملک میں حکومت نام کی کوئی چیز نظر نہیں آتی ۔جنگل کا قانون رائج ہے طاقت ور طبقہ کمزور طبقے پر ظلم کر رہا ہے قانون بھی امیر کے لئے نہیں صرف غریب کے لئے بنایا گیا اس واقعہ کی ذمہ داری حکمرانوں پر عائد ہوتی ہے ،انہوں نے کہا کہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ خواتین کے تحفظ کے لئے عملی اقدامات کریں اور ایسے واقعات کو روکنے کے لئے عملی اقدامات اٹھائیں اور اس واقعہ میں ملوث افراد کو کڑی سزاد یں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1