ڈائیوورسڈ اڈائیوورسڈ افراد کے بچوں کی ملاقاتوں کیلئے2رکنی انسپکشن ٹیم تشکیل

ڈائیوورسڈ اڈائیوورسڈ افراد کے بچوں کی ملاقاتوں کیلئے2رکنی انسپکشن ٹیم تشکیل

 لاہور (نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے علیحدگی اختیار کرنے والے والدین اور بچوں کے درمیان ملاقاتوں کیلئے مجوزہ جگہ چلڈرن کمپلیکس کی انسپکشن کیلئے2رکنی ٹیم تشکیل دیدی، چیف جسٹس عمر عطاءبندیال اور جسٹس فرخ عرفان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے والدین اور بچوں کے درمیان ملاقاتوں کیلئے بہتر ماحول اور جگہ کی فراہمی کیلئے درخواست پر سماعت کی ، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل شاہد مبین نے بنچ کو بتایا کہ پنجاب حکومت نے چلڈرن کمپلیکس کے اوپر والے پورشن میں5کمرے والدین اور بچوں کے درمیان ملاقاتوں کیلئے تجویز کئے ہیں، چیف جسٹس کے استفسار پر عدالت میں موجود ہوم ڈیپارٹمنٹ کے نمائندے نے بنچ کو کمروں کے سائز بارے آگاہ کیا تو چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ یہ کمرے نہیں بلکہ باتھ رومز لگتے ہیں ، اتنے چھوٹے کمروں میں والدین اور بچوں کے درمیان ملاقات کیلئے کیسے بہتر اور آرام دہ ماحول فراہم کیا جا سکتا ہے۔چیف جسٹس نے کہا کہ ملاقاتوں کیلئے جگہ کا معاملہ بہت اہم ہے، یہ مفاد عامہ کا کیس ہے جس میں عدالت چاہتی ہے کہ علیحدگی اختیار کرنے والے والدین کو اپنے بچوں سے ملاقات کیلئے بہتر اور صاف ماحول میسر آنا چاہیے۔ اس درخواست کی مزید سماعت5مئی کو ہو گی۔

انسپکشن ٹیم

مزید : صفحہ آخر