پرسرار طور پر لاپتہ ہونے والے بارہ سالہ بچے کاکوئی سراغ نہ مل سکا

پرسرار طور پر لاپتہ ہونے والے بارہ سالہ بچے کاکوئی سراغ نہ مل سکا

لاہور( کرائم سیل)ہربنس پورہ کے علاقہ میں تین ہفتوں سے پراسرار طور پر لاپتہ ہونے والے والدین کے بارہ سالہ اکلوتے بیٹے کا ابھی تک کوئی سراغ نہ مل سکا ، ماں صدمے سے ہسپتال پہنچ گئی، لواحقین دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبورہوگئے جبکہ والدین نے الٹی میٹم دیا ہے کہ اگر لخت جگر کا سراغ نہ لگایا گیا تو اسمبلی ہال کے سامنے خود سوزی کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔بتایا جاتا ہے کہ ہربنس پورہ کے رہائشی عبدالرفیق کا بارہ سالہ بیٹا عدنان رفیق یکم مارچ کو گھر سے نکلا لیکن رات گئے تک واپس نہ آیا جس پر والدین نے اسے تلاش کرنا شروع کردیا لیکن عدنان کو کوئی سراغ نہ ملا۔ والدین نے اخبارات میں بچے کے لاپتہ ہونے کے اشتہارات دیے لیکن کوئی سراغ نہ لگ سکا۔ مقامی تھانہ میں بچے کی گمشدگی کی رپورٹ درج کروادی لیکن پولیس ٹال مٹول کرکے لواحقین کو واپس بھجوادیتی ہے ۔ والدین نے اعلی حکام سے مددکی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بچے کا سراغ نہ لگایا گیا تو وہ اسمبلی ہال کے سامنے خود سوزی کرنے پرمجبور ہوجائیں گے۔

مزید : علاقائی