کوہستان ویڈیو سکینڈل میں لڑکیوں کے والدین نے بیان ریکارڈ کروادیا

کوہستان ویڈیو سکینڈل میں لڑکیوں کے والدین نے بیان ریکارڈ کروادیا

ایبٹ آباد+شانگلہ(آن لائن) کوہستان ویڈیو سکینڈل کیس میں لڑکیوں کے والدین نے عدالت سے کہا ہے کہ لڑکیاں زندہ ہیں لیکن قبائلی روایات کے مطابق عدالت میں پیش نہیں کرسکتے جبکہ عدالت نے لڑکیوں کو 2 اپریل کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ تفصیلات کے مطابق منگل کو کوہستان ویڈیو سکینڈل کی سماعت سیشن کورٹ کے جج جسٹس محمد ارشاد نے کی جس میں لڑکیوں کے والدین نے عدالت میں بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے کہا ہے کہ لڑکیاں زندہ ہیں اور وہ بالکل ٹھیک ہیں لیکن قبائلی روایات کے مطابق لڑکیوں کو عدالت میں پیش نہیں کرسکتے۔ لڑکیوں کے والدین نے کہا کہ پولیس اس کیس میں غفلت کا مظاہرہ کررہی ہے جس پر جسٹس ارشاد نے والدین کو حکم دیا کہ وہ 2 اپریل کو لڑکیوں کو عدالت میں پیش کریں۔

ویڈیو سکینڈل

مزید : صفحہ آخر