سرگودھا‘ گھریلو ملازمہ سے بد اخلاقی کیس لیگی ایم پی اے 20 مارچ کو عدالت طلب

سرگودھا‘ گھریلو ملازمہ سے بد اخلاقی کیس لیگی ایم پی اے 20 مارچ کو عدالت طلب

حیدرآباد ٹاﺅن(آن لائن) سرگودھا میں گھریلو ملازمہ سے مبینہ زیادتی کیس میں عدالت نے (ن) لیگ کے رکن پنجاب اسمبلی کو 20 مارچ کو طلب کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ جھال چکیاں میں درج مقدمہ میں نامزد ملزم سابق صوبائی وزیر اور مسلم لیگ (ن) کے ایم پی اے مہر غلام دستگیر خان لک پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنی ملازمہ مسماة ارم بی بی کو زبردستی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ مقامی پولیس نے زیادتی کے مقدمہ میں رکن پنجاب اسمبلی مہر غلام دستگیر خان لک کو بے گناہ قرار دے دیا جس پر لڑکی نے عدالت سے رجوع کیا تو عدالت نے مقدمہ میں نامزد ملزم رکن صوبائی اسمبلی کو 20 مارچ کو طلب کرلیا ہے۔ یاد رہے کہ مذکورہ ایم پی اے نے اس مقدمے میں عبوری ضمانت کروارکھی ہے۔ دوسری جانب زیادتی کا شکار ہونے والی ارم بی بی نے کہا ہے کہ ایم پی اے نے اثر و رسوخ استعمال کرکے خود کو پولیس سے بے گناہ قرار دلوایا ہے لہٰذا مجھے انصاف فراہم کیا جائے۔ لڑکی کا کہنا تھا کہ کہیں مجھے بھی انصاف کے حصول کیلئے مظفرگڑھ کی لڑکی کی طرح انتہائی اقدام نہ اٹھانا پڑے۔ ادھر (ن) لیگی رکن پنجاب اسمبلی مہر غلام دستگیر لک نے الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے اپنے اوپر قائم مقدمے کو سیاسی انتقام قرار دیا ہے

گھریلو ملازمہ سے بد اخلاقی

مزید : صفحہ آخر