تیزاب پھینک کر بیوی کو ہلاک بیٹے اور رشتے داروں کو زخمی کرنیوالا ملزم گرفتار کر لیا گیا

تیزاب پھینک کر بیوی کو ہلاک بیٹے اور رشتے داروں کو زخمی کرنیوالا ملزم گرفتار ...
تیزاب پھینک کر بیوی کو ہلاک بیٹے اور رشتے داروں کو زخمی کرنیوالا ملزم گرفتار کر لیا گیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

                      لاہور(کرائم سیل)انویسٹی گیشن پولیس راوی روڈ نے کچی آبادی شمس پورہ راوی روڈ کی رہائشی متوفی سکینہ بی بی کو گھریلو ناچاقی پر تیزاب پھینک کر ہلاک کرنے، ایک سالہ بیٹے ابراہیم ،سالے شوکت اور رشیدہ بی بی کو زخمی کرنے کی واردات میں ملوث ملزم محمد ناصر مختارکو گرفتار کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملزم ناصر مختارکی ناراض بیوی سکینہ بی بی نے گھریلو لڑائی جھگڑوں سے تنگ آ کر عدالت میں تنسیخ نکاح کا دعویٰ کر رکھا تھا ۔ 9 فروری کوملزم نے بیوی کے والدین کے گھر شمس پورہ جا کر اہل خانہ پر تیزاب پھینک دیا جس سے سکینہ بی بی بری طرح جھلس گئی تھی جبکہ ایک سالہ بیٹا ابراہیم ، سالا شوکت اور اس کی بھابی رشیدہ بی بی جو پاس ہی بیٹھے تھے تیزاب سے زخمی ہو گئے تھے، ملزم تیزاب پھینکنے کے بعد موقع واردات سے فرار ہو گیا تھا ۔سکینہ بی بی اس بری طرح جل گئی تھی کہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہسپتال میں دم توڑ گئی۔واقعہ کا فوری نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی اولاہورچوہدری شفیق احمد نے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن ذوالفقار حمید اور ایس ایس پی انویسٹی گیشن عبدالرب چوہدری کو ملزم کی گرفتاری کا حکم دیاجس پر انچارج انویسٹی گیشن راوی روڈ اور اس کی ٹیم نے دن رات کی محنت کے بعد ملزم کو شاہدرہ کے علاقے سے گرفتار کر لیا ۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ ملزم بے کار اور آوارہ گرد تھا جو اپنا گھر پہلے ہی فروخت کر چکا تھا اور بیوی کو تیزاب پھینک کر ہلاک کرنے کے بعد مختلف مزاروں اور قبرستانوں میں وقت گزاری کرتا تھا اور اپنا ٹھکانہ روز بدل لیتا تھا۔ایس ایس پی انویسٹی گیشن عبدالرب چوہدری نے بیوی کو بے دردی سے ہلاک کرنے والے ملزم کو گرفتار کرنے پر انچارج انویسٹی گیشن اور پولیس ٹیم کے دیگر ممبران کے لیے انعامات اور تعریفی اسناد کا اعلان کیا ہے۔

مزید : علاقائی