اوجی ڈی سی ایل میں 31لاکھ لیٹر ڈیزل کی خوردبرد کا انکشاف

اوجی ڈی سی ایل میں 31لاکھ لیٹر ڈیزل کی خوردبرد کا انکشاف
اوجی ڈی سی ایل میں 31لاکھ لیٹر ڈیزل کی خوردبرد کا انکشاف

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(شہباز اکمل جندران ,انویسٹی گیشن سیل) آئل اینڈ گیس ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈ میں کروڑوں روپے مالیت کا فراڈ بے نقاب ہوگیا۔ٹنڈو عالم لاجسٹک بیس میں مبینہ طورپر 32کروڑ روپے مالیت کے 31لاکھ لیٹر ھائی سپیڈ ڈیزل کی خورد برد کی گئی۔ البتہ اوجی ڈی سی ایل کی انتظامیہ نے محض ایک شخص پر ذمہ داری ڈالتے ہوئے معاملہ سرد خانے میں ڈال دیا۔معلوم ہواہے کہ آئل اینڈ گیس ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈ کی ٹنڈو عالم لاجسٹک بیس میں 2006سے 2011تک مبینہ طورپر 32کروڑ روپے مالیت کے 31لاکھ لیٹر ھائی سپیڈ ڈیزل کی خورد برد کی گئی۔ صورتحال سامنے آنے پر پی ایس او کی انتظامیہ میں کھلبلی مچ گئی۔ اور معاملے کی انکوائری شروع کردی گئی۔ لیکن لمبے عرصے تک جاری رہنے والی اس انکوائری میں بھی صرف حسین بخش نوریجو نامی شخص کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے معاملے کو سرد خانے میں ڈال دیا گیا ہے۔ یہ بھی معلوم ہواہے کہ آئل اینڈ گیس ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈمیں پٹرول اور ڈیزل کی خورد برد اور ٹینکروں کی گمشدگی جیسے متعدد واقعات پیش آچکے ہیں۔ لیکن کمپنی کی انتظامیہ سرسری کارروائی کے بعد خاموشی اختیار کرلیتی ہے۔ یہ بھی معلوم ہواہے کہ او جی ڈی سی ایل کے سٹور مینوئل کے باب 17کی کلاز 9کے تحت کسی بھی قسم کے سرکاری نقصان کی صورت متعلقہ حکام ذمہ دار ٹھہرائے جائینگے۔اور ان کے خلا ف فی الفور مقدمہ درج کروایا جائیگا۔ لیکن آئل اینڈ گیس ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈ نے محض حسین بخش نوریجو کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے معاملے کو ٹال دیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس