انتظامیہ کے سارے کام عدالت کوکرنے ہیں تو ٹیک اوورکرلیتے ہیں : سپریم کورٹ

انتظامیہ کے سارے کام عدالت کوکرنے ہیں تو ٹیک اوورکرلیتے ہیں : سپریم کورٹ
انتظامیہ کے سارے کام عدالت کوکرنے ہیں تو ٹیک اوورکرلیتے ہیں : سپریم کورٹ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے ریمارکس دیے ہیں کہ اگر انتظامیہ کے سارے ہی کام عدالت کو کرنے ہیں تو پھر ٹیک اوورکرلیتے ہیں ، چاروں چیف سیکریٹریز اور سیکریٹری ہیلتھ کو توہین عدالت کا شوکاز نوٹس جاری کردیا۔ یہ ریمارکس جسٹس جواد ایس خواجہ نے لیڈی ہیلتھ ورکرز کو مستقل کرنے کے کیس کی سماعت کے دوران دیئے ۔جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے لیڈی ہیلتھ ورکرز کو مستقل کرنے سے متعلق کیس کی سماعت کی ۔ لیڈی ہیلتھ ورکرز کو مستقل نہ کیے جانے پر برہمی کا اظہارکرتے ہوئے عدالت کاکہناتھاکہ حکم کے باوجود بنیادی حق نہیں دیاجارہا، لیڈی ہیلتھ ورکرز قوم کی بچیاں ہیں ،مستقلی سے حکومت کسی پر احسان نہیں کررہی ۔ عدالت نے متعلقہ حکام کو توہین عدالت کا شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے ریمارکس دیئے ہیں کہ سارے کام عدالت کو ہی کرنے ہیں تو ٹیک اووکرلیتے ہیں۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں