تنظیم اتحاد امت پاکستان کی اپیل پر ملک گیر سطح پر یوم تحفظ نسواں منایا گیا

تنظیم اتحاد امت پاکستان کی اپیل پر ملک گیر سطح پر یوم تحفظ نسواں منایا گیا

  

لاہور (خبر نگار خصوصی )تنظیم اتحادامت پاکستان کی اپیل پرگذشتہ روز جمعہ کو ملک گیر سطح پر ’’تحفظ نسواں‘‘کے طور پر منایا گیا ۔خطبات جمعہ میں قرآن وسنت کی روشنی میں علماء ومشائخ امت نے’’ عظمت نسواں ‘‘کے موضوع پر خطاب کئے ۔مرکزی تقریب سے چیئرمین تنظیم اتحادامت پاکستان محمد ضیاء الحق نقشبندی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سلمان صوفی کے پاس علماء کے ساتھ مشاور ت کے لیے ٹائم ہی نہیں ہے دو سال میں 18این جی اوز کی نمائندہ خواتین کو بلایا جاتا رہا لیکن علماء کو نظر انداز کیا گیا۔

اس عرصہ میں ایک بار بھی علماء کرام سے رابطہ کرنے کی سلمان صوفی نے اورنہ ہی حکومت پنجاب نے زحمت کی ۔ اسلامی قوانین حقوق خواتین کی ضمانت ہیں کیونکہ اسلام خواتین کے حقوق کا سب سے بڑا علمبردار ہے۔اسلام سے پہلے ماں، بہن ،بیٹی اوربیوی کووہ مقام حاصل نہیں تھاجو آج اسلام کی برکت سے ہے ۔حکمران حقوق نسواں کی منظوری کے ذریعے اسلام مخالف قوتوں کا خوش کرنا چاہتے ہیں جس کی اسلامی جمہوریہ پاکستان کے معاشرے میں کسی صورت اجازت نہیں دی جا سکتی ۔مولانا قاری غلام حسین نقشبندی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حقوق نسواں قانون کی آڑ میں حکمران امریکہ نواز این جی اوز کوخوش کرنا چاہتے ہیں ۔مولانا مفتی مسعود الرحمن ،پیر سید کرامت علی حسین ،مولانا آصف طاہر، گوجرانوالہ میں مولانا یعنقوب فریدی، نارنگ منڈی میں مولانا عابد حجازی ، سیالکوٹ میں علامہ عبدالجبار ،گوجرانوالہ میں علامہ ندیم احمد نعیمی ،ایبٹ آباد میں ظہور نعیمی،قصور میں علامہ جمشید الرحمن ،مرید کے میں مولانا وقاص عظیم ،شیخوپورہ حاجی اویس قادری ،کامونکی مولانا زاہد ہاشمی نے خطاب کیا

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -