وکیل کے پیش نہ ہونے پر عوامی تحریک کے استغاثہ کی سماعت آج تک کیلئے ملتوی

وکیل کے پیش نہ ہونے پر عوامی تحریک کے استغاثہ کی سماعت آج تک کیلئے ملتوی

  

لاہور(نامہ نگار)انسداددہشت گردی کی عدالت نے وکیل کے پیش نہ ہونے پرپاکستان عوامی تحریک کے استغاثہ کی سماعت آج 19 مارچ تک ملتوی کر دی۔استغاثہ میں کہاگیاہے کہ حکومت نے مخالف سیاسی جماعتوں کے اتحادکو کچلنے کے لئے ادارہ منہاج القرآن پر حملہ کیا، ذمہ داروں کے خلاف مقدمہ چلایا جائے۔پاکستان عوامی تحریک کی جانب سے دائراستغاثہ کی انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج خواجہ ظفر اقبال نے سماعت کی۔ پاکستان عوامی تحریک کے استغاثہ میں مدعی جواد حامد اپنا بیان قلمبند کرا چکے ہیں۔،عوامی تحریک کے وکیل رائے بشیر احمد کے عدالت میں پیش نہ ہونے پر استغاثہ کی مزید سماعت ملتوی کرگئی ۔استغاثہ میں الزام لگایا گیا ہے کہ مئی 2014ء میں پی اے ٹی کے سربراہ ڈاکٹرطاہر القادری نے حکومت کے خلاف تحریک کااعلان کیا اور مسلم لیگ (ق)اورتحریک انصاف کے ساتھ مل کر اتحاد بنایا، جس پر حکومت نے تحریک کو کچلنے کے لئے ادارہ منہاج القران حملہ کرایا، وزیراعظم نواز شریف اوروزیراعلی شہباز شریف سمیت 139افراد کا نام استغاثہ میں شامل ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -