بونیر ،سول سیکرٹریٹ کی دو منزلہ عمارت گرنے کا خطرہ

بونیر ،سول سیکرٹریٹ کی دو منزلہ عمارت گرنے کا خطرہ

  

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے سول سیکرٹریٹ کے دو منزلہ عمارت کے گرنے کا شدید خطرہ ،دو منزلہ بلڈنگ کو خالی کیا گیا ،بلڈنگ میں کام کرنے والے محکموں نے تمام دفتری سامان سمیٹ کر کرایہ کے عمارتوں میں منتقل ہوگئے ،اگر پچھلے سال اس بلڈنگ کو مخفوظ بنانے کیلئے اقدامت اٹھائے جاتے تو آج کروڑوں روپوں کی بجائے سات کرورڑ روپیہ عمارت کو مخفوظ بنانے پر خرچ نہ ہوتے ،صوبائی حکومت کروڑوں روپے کی اس بلڈنگ کو گرنے سے بچانے کے لئے فوری اقدامات کرے ۔ان خیالات کااظہار ضلع کونسل بونیر میں اپوززیشن لیڈر حاجی صدیق اللہ نے بلڈنگ کا معائنہ کرنے کے دوران مقامی صحافیوں سے گفتگوں کرتے ہوئے کیا ،انہوں نے کہا کہ مذکوری بلڈنگ میں سی اینڈ ڈبلیو ،پبلک ہیلتھ ،سو شل ویلفئیر اور ایکسائیز اینڈ ٹیکسیشن جیسے اہم محکمے قائیم ہیں ۔جو آج سے نو سال قبل دو کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر ہوئی تھی ۔گذشتہ سال اس بلڈنگ کی عقبی حصہ کی زد میں سلائیڈنگ شروع ہونے کی نتیجہ میں اس کے بنیادوں سے تین چار گز کے فاصلے پر پہنچ گئی تھی ۔جسکا ہم نے سی اینڈ ڈبلیو کو بروقت اطلاع دی ،جنہوں نے نے سٹمیٹ تیار کرکے صوبائی حکومت کو بھیج دی تھی ۔مگر صوبائی حکومت اور اعلی حکام نے اس کا کوئی نوٹس نہیں لیا ،اور اب حالیہ شدید بارشوں میں بلڈنگ کے بہت نزدیک سلائیڈنگ ہوئی ہے جسکی وجہ سے ان محکموں نے عمارت کو خالی کرایا ہے ۔حاجی صدیق اللہ نے صوبائی حکومت اور اعلی حکام سے پر زور مطالبہ کیا کہ اگر اب کاغذی کاروائی کی بجائے فوری طو رپر عملی اقدامات ٹھائی جائے تو بلڈنگ کو گرانے سے بچایا جاسکتا ہے ۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -