اشتہاریوں کی گرفتاری کاعمل تیز، دوبارہ لسٹیں مرتب، نئی حکمت عملی پرعملدرآمد

اشتہاریوں کی گرفتاری کاعمل تیز، دوبارہ لسٹیں مرتب، نئی حکمت عملی پرعملدرآمد

  

میلسی (نما ئندہ خصوصی ) صوبے بھر میں خطرناک اشتہاریوں کی گرفتاری کے عمل کو تیز کرنے ، ان اشتہاریوں کی فہرستوں کی Scrutiny کرنے اور نئے سرے سے لسٹیں مرتب کرنے کے ساتھ ساتھ بنک ڈکیتیوں میں ملوث ملزموں کی گرفتاری اور ان سے لوٹی گئی رقم کی برآمدگی کو یقینی بنانے کے لئے نئی طے شدہ حکمت عملی پر سختی سے عملدرآمد کرنے کا فیصلہ کیا گیایہ فیصلہ آج سنٹرل پولیس آفس لاہور میں انسپکٹر جنرل (بقیہ نمبر21صفحہ7پر )

پولیس پنجاب، مشتاق احمد سکھیراکی سربراہی میں منعقد آر پی او کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کانفرنس میں آئی جی پنجاب نے تمام فیلڈ افسران کو سختی سے ہدایات جاری کیں کہ وہ اپنے اپنے ریجنز میں اشتہاریوں کی گرفتاری کے خلاف شروع کیے گئے کریک ڈاؤن کی روزانہ کی بنیادوں پرنہ صرف مانیٹرنگ کریں بلکہ ان کی گرفتاری کے لئے سپیشل ٹیموں کی تشکیل کے ساتھ ساتھ Geo-Fencing، CDRاور سی آئی اے کے ساتھ مل کر حکمت عملی پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں اوراشتہاریوں کو پناہ دینے والوں کے خلاف دفعہ 216ت پ کے تحت کارروائیاں کریں ۔اس کے ساتھ ساتھ اشتہاری مجرمان کے خلاف زیر دفعہ 88ضابطہ فوجداری ایکٹ کویقینی بنائیں۔ کانفرنس میں پولیس ہیومن ریسورس ریکارڈ مینجمنٹ کی رفتار کا تفصیلی جائزہ لیتے ہوئے یہ طے کیا گیا کہ افسروں اور اہلکاروں کے ڈیٹا کا اندراج ہونے کے بعد اسے ایک مرتبہ Re-checkکیا جائے گا اور فائنل ہونے کے بعد ڈیٹا انٹری میں ردوبدل اور کسی بھی قسم کی Malpracticeکو روکنے کے لئے سپیشل کوڈ لگانے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -