زمین میں بہت بڑا سوراخ، سائنسدانوں نے خوفناک پیش گوئی کردی

زمین میں بہت بڑا سوراخ، سائنسدانوں نے خوفناک پیش گوئی کردی
زمین میں بہت بڑا سوراخ، سائنسدانوں نے خوفناک پیش گوئی کردی

  

ادیس ابابا (نیوز ڈیسک) صحراکی خشکی اور سمندر میں پانی کی فراوانی بے حد متضاد مظاہر فطرت ہیں، لیکن قدرت چاہے تو صحرا کے سینے سے سمندر پھوٹنے کا معجزہ رونما ہو سکتا ہے۔ افریقی ملک ایتھیوپیا میں واقعی یہ معجزہ ظہور پزیر ہو رہا ہے جہاں قدرت صحرا کو سمندر میں بدلنے کا حیرتناک کرشمہ دکھارہی ہے۔

جریدے آئی بی ٹائمز کے مطابق ایتھیوپیا کے صحرائے آفار میں 2005ءمیں زمین پھٹنا شروع ہوئی اور اب یہاں 65 میل لمبی اور 20 فٹ چوڑی دراڑ نمودار ہو چکی ہے، جس کا پھیلاﺅ تاحال جاری ہے۔ زمین کے اندر بننے والا یہ شگاف اتنا بڑا ہو چکا ہے کہ اسے آسمان پر اڑتے طیاروں سے صاف دیکھا جاسکتا ہے۔

اس خوفناک شگاف کے نمودار ہونے کے بعد دنیا بھر کے سائنسدانوں نے اس جگہ کا رخ کیا اور 2009ءمیں ”جیو فزیکل ریسرچ لیٹرز“ نامی سائنسی جریدے میں اس کی حیرت انگیز حقیقت سے پردہ اٹھانے والی ایک رپورٹ شائع ہوئی۔ رپورٹ میں انکشاف کیا گیا کہ یہ شگاف عرب اور افریقی ارضیاتی پلیٹوں کے نقطہ اتصال کے مقام پر پیدا ہورہا ہے، اور یہ صحرا میں سمندر نمودار ہونے کی ابتداءہے۔

مزید جانئے: ’رہنے کیلئے دنیا کے مہنگے اور سستے ترین شہروں کی فہرست جاری‘ پاکستان کے کن شہروں نے جگہ بنائی؟ آپ بھی جانئے

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ یہ شگاف مزید بڑھتا جائے گا، بحیرہ روم کا پانی اس میں بھرنا شروع ہوجائے گا، اور بالآخر ایتھوپیا کا صحرائے آفار سمندر میں بدل جائے گا۔ ماہرین کا مزید کہنا ہے کہ یہ ایک انتہائی طویل جیولیوجیکل پراسس ہے، لیکن اس کا آغاز ہماری آنکھوں کے سامنے ہوچکا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -