عرب ملک میں حجاب والی خواتین کے ساتھ ایسا سلوک کہ آپ مغربی ممالک کے اقدامات کو بھول جائیں گے

عرب ملک میں حجاب والی خواتین کے ساتھ ایسا سلوک کہ آپ مغربی ممالک کے اقدامات ...
عرب ملک میں حجاب والی خواتین کے ساتھ ایسا سلوک کہ آپ مغربی ممالک کے اقدامات کو بھول جائیں گے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

دوحہ (مانیٹرنگ ڈیسک) مغربی ممالک میں حجاب پہننے والی مسلمان خواتین کے خلاف تعصب کا اظہار کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن اسلامی ملک قطر میں حجاب والی خواتین کے ساتھ ایسے سلوک کا انکشاف سامنے آیا ہے کہ سارے عرب سوشل میڈیا پر ہنگامے کا سماں پیدا ہوگیا ہے۔

قطری شہزادے کے ہاتھ سے بنا برگر 10 لاکھ روپے میں فروخت

عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق بدھ کے روز قطر کے دارالحکومت میں کینیڈین موسیقار برائن ایڈمز کا کنسرٹ منعقد ہوا۔ اس کنسرٹ میں شرکت کیلئے جانے والی متعدد خواتین یہ جان کر حیران رہ گئیں کہ حجاب کی وجہ سے انہیں داخلے کی اجازت نہیں تھی۔ قطر میں مقیم تیونیسیا سے تعلق رکھنے والی 44 سالہ خاتون ارم قاسیس نے بتایا کہ وہ اور ان کی بہن ٹکٹ ہاتھ میں پکڑے قطارمیں کھڑی تھیں کہ ایک سکیورٹی گارڈ نے انہیں علیحدہ کردیا۔ گارڈ کا کہنا تھا کہ انہیں اندر جانے کی اجازت نہیں ہے۔ ارم نے بتایا کہ وہ اس سلوک پر سخت صدمے کی شکار ہوئیں۔ انہیں اس بات پر یقین نہیں آرہا تھا کہ حجاب پہننے کی وجہ سے ایک اسلامی ملک میں ان کے ساتھ یہ سلوک کیا جارہا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ ان کے پاس ٹکٹ بھی موجود تھے اور جب انہوں نے ٹکٹ خریدے تھے تو انہیں کوئی ایسی شرائط بھی نہیں بتائی گئیں، لیکن اس کے باوجود انہیں اندر داخل ہونے کی اجازت نہیں دی گئی۔ ارم کی طرح درجنوں دیگر خواتین نے بھی سوشل میڈیا پر اپنے ساتھ پیش آنے والے ایسے ہی معاملے کی تفصیلات بیان کیں۔

دوسری جانب متعدد سوشل میڈیا صارفین کا یہ بھی کہنا تھا کہ کنسرٹ میں حجاب پہننے والی خواتین بھی نظر آرہی تھیں، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ اگر کوئی پابندی عائد کی بھی گئی تو اس کا اطلاق یکساں طور پر نہیں کیا گیا۔ کنسرٹ کا انعقاد کرنے والی کمپنی الائیو انٹرٹینمنٹ کی جانب سے اس معاملے پر تاحال کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا۔

مزید : عرب دنیا